ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Sanjeevani - A Shot Of Life:نیٹ ورک18۔فیڈرل بینک کی پہل،نجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘،ٹیکہ کاری مہم کاآغاز

نیٹ ورک 18، فیڈرل بینک کی نئی مہم ’سنجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘، ٹیکہ کاری سے متعلق تمام خدشات کو ختم کرنے کے لیے شعوربیداری مہم کا آغاز ہوگیاہے۔ جس کا ہدف ملک میں کورونا وائرس ٹیکہ کاری کو تیز کرنا ہے۔ عالمی یوم صحت کے موقع پر سنجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘، ٹیکہ کاری مہم کو لانچ کیاگیاہے۔

  • Share this:
Sanjeevani - A Shot Of Life:نیٹ ورک18۔فیڈرل بینک کی پہل،نجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘،ٹیکہ کاری  مہم کاآغاز
۔ عالمی یوم صحت کے موقع پر سنجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘، ٹیکہ کاری مہم کو لانچ کیاگیاہے۔

بدھ کے روز نیٹ ورک 18 اور فیڈرل بینک (Network18 & Federal Bank) نے ایک بے مثال پہل کے تحت  ’سنجیونی- ٹیکہ زندگی کا‘ (Sanjeevani- a shot of life) مہم آغاز کیا۔معروف اداکار سونو سود اور بی ایس ایف کے ڈی جی راکیش استھانہ کی موجودگی میں کورونا وائرس (COVID-19) ویکسی نیشن مہم پر اپنی نوعیت کا پہلا قدم ہے۔سنجیوانی (Sanjeevani) پروگرام کا آغاز پنجاب کے علاقے اٹاری بارڈر پر جوانوں کی طرف سے بیک گراؤنڈ میں سلامی کی تقریب کے درمیان ہوا، اس پروگرام کا اہم مقصد کووڈ ویکسی نیشن کے بارے میں آگاہی فراہم کرنا ہے۔ تاکہ ملک کا ہر شہری عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کی قہر سے محفوظ رہ سکے۔


اس لانچنگ تقریب کے دوران اداکار سونو سود نے خود آج ٹیکہ لگایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’مجھے وہ وقت (گذشتہ برس) یاد جب مہاجر مزدور دور دراز سے نقل و مکانی کر کے اپنے گھر واپس لوٹ رہے تھے۔ ہم نے ان سے صرف اپیل کی کہ وہ پرسکون رہیں اور سلامت رہیں۔ اب ہمارے پاس کووڈ۔19 کے خلاف ویکسین موجود ہے۔ جو بھی میری باتیں سن رہے ہیں وہ سب کورونا ویکسین حاصل کریں اور اس بارے میں دوسروں کو بھی آگاہ کریں‘۔



عالمی یوم صحت کے موقع پر جو مہم چلائی گئی ہے اس کا مقصد کووڈ۔19 کے خلاف ویکسی نیشن کے بارے میں آگاہی پیدا کرنا اور اس میں اضافہ کرنا ہے۔ کیوں کہ سب کو ٹیکہ لگانا ضروری ہے۔ اٹاری بارڈر پر لانچ کے موقع پر اس تقریب میں فیڈرل بینک کے ایم ڈی اور سی ای او شیام سرینواسن بھی موجود تھے۔سونو سود نے مزید کہا کہ ’لوگوں کو اپنے افراد خاندان، عوام اور ملک کے تمام شہریوں کو محفوظ رکھنے کے لئے کووڈ۔19کی ویکسین حاصل کرنا ضروری ہے۔ تاکہ پورا سماج صحت مند بن سکے‘۔

یہ انوکھا اقدام فیڈرل بینک کے سی ایس آر ڈرائیو کے تحت اٹھایا گیا ہے۔ تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ ہر ہندوستان کے تمام شہروں یہاں تک کہ ملک کے دور دراز علاقوں میں بھی زندگی گذارنے والے ’شارٹ آف لائف‘ سے مستفید ہوسکے۔


بی ایس ایف کے ڈی جی راکیش استھانہ نے بھی لانچ کے وقت ویکسین کے حوالے سے کسی قسم کی ہچکچاہٹ کو صاف کیا۔استھانہ نے کہا کہ ’ایک رہنما کی حیثیت سے ہمیں اعلی محاذ کی قیادت کرنی ہوگی۔ ہر جوان نے یہ ویکسین لی ہے۔ میں یہ بتانا چاہوں گا کہ قوم کے دشمنوں سے لڑنے کے بجائے ہماری صحت کے دشمنوں سے لڑنا زیادہ ضروری ہے‘۔آستھانہ نے مزید کہا کہ ان کی ٹیم پہلے ہی اس ویکسینیشن سے واقف ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوجیوں اور ان کے اہل خانہ میں کسی قسم کا تذبذب نہیں ہے۔

سنجیوانی کی ویکسینیشن مہم کا آغاز پنجاب کے امرتسر میں تاریخی اٹاری بارڈر سے ہوا۔واضح رہے کہ سنجیوانی گاڑی کووڈ۔19 کے خلاف ویکسی نیشن مہم کے تحت 5 اہم اضلاع میں ویکسین کے بارے میں معلومات عام کرنے کے لئے پورے ملک میں سفر کرے گی۔ جو امرتسر سے شروع ہو کر اندور، ناسک، گنٹور اور دکشن کنڈا پر محیط ہوگی۔اس اقدام کا آغاز اس وقت ہوا جب ہندوستان میں کووڈ ویکسی نیشن کے اپنے تیسرے مرحلے کا آغاز کیا گیا۔ اس کے تحت ویکسین 45 سال سے زیادہ عمر والوں کو بلا معاوضہ دستیاب ہے۔ حکومت کا منصوبہ ہے کہ اس سے بھی کم عمر کے لوگوں کو ویکسین دی جائے، تاکہ کووڈ۔19 کے خلاف بھارت دنیا کا سب سے بڑا اور پہلا ملک بن جائے۔


اس اقدام کے ذریعے این جی اوز، سرکاری ایجنسیوں اور سماجی طور پر بااثر شخصیات کا تعاون حاصل کرتے ہوئے کررونا ویکسی نیشن کے متعلق شعوربیدارکیاجائیگا۔ تاکہ وہ صحیح طور پر کورونا ویکسین کے بارے میں معلومات عام کریں اور غلط معلومات اور بے جا خدشات کا ازالہ کرسکیں۔ جبکہ ڈونرز کو سب سے زیادہ پسماندہ اور بدترین متاثرہ ہندوستانیوں کو مفت ویکسین دی جائے گی۔

اس طرح کے بے مثال اقدام کو سراہنا ضروری ہے۔ ملک میں لوگوں کی صحت اور فلاح و بہبود کے لیے آپ کی آواز بلند کی جائے کیونکہ کوئی بھی اس وبا سے محفوظ نہیں ہے، جب تک کہ ہر شخص محفوظ نہ ہو جائے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 07, 2021 12:15 PM IST