ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کورونا کا خوف ، پنجاب اور مہاراشٹر کے بعد اب گجرات کے چار شہروں میں بھی نائٹ کرفیو لاگو

Gujarat Coronavirus: گجرات حکومت کی جانب سے احمد آباد ، راجکوٹ ، وڈودرہ اور سورت میں 17 مارچ سے 31 مارچ تک کیلئے نائٹ کرفیو لاگو کیا گیا ہے ۔

  • Share this:
کورونا کا خوف ، پنجاب اور مہاراشٹر کے بعد اب گجرات کے چار شہروں میں بھی نائٹ کرفیو لاگو
گجرات میں بھی کورونا وائرس کے معاملات بڑھ رہے ہیں ۔ (Pic- AP)

ملک میں بڑھ رہے کورونا وائرس کے معاملات نے ایک مرتبہ ریاستوں کی تشویشات میں اضافہ کردیا ہے ۔ مہاراشٹر اور پنجاب میں مسلسل کورونا وائرس کے نئے معاملات زیادہ تعداد میں سامنے آرہے ہیں ۔ اس وجہ سے مہاراشٹر حکومت نے کئی اضلاع میں نائٹ کرفیو اور ناگپور میں لاک ڈاون لاگو کردیا ہے ۔ پنجاب کا بھی یہی حال ہے ۔ اب احتیاط کے طور پر گجرات حکومت نے بھی چار اہم شہروں میں نائٹ کرفیو لاگو کردیا ہے ۔ نائٹ کرفیو کے دوران صرف ضروری خدمات ہی چالو رہیں گی ۔


گجرات حکومت کی جانب سے احمد آباد ، راجکوٹ ، وڈودرہ اور سورت میں 17 مارچ سے 31 مارچ تک کیلئے نائٹ کرفیو لاگو کیا گیا ہے ۔ وہیں ریاستی حکومت کا کہنا ہے کہ 16 مارچ یعنی منگل کی رات 12 بجے ( سوموار دیر رات ) سے صبح چھ بجے پری نائٹ کرفیو رکھا گیا ۔ وہیں اس کے بعد 17 مارچ سے نائٹ کرفیو کا وقت رات 10 بجے سے صبح 6 بجے تک کا ہوگا ۔ سرکار نے یہ قدم گزشہ کچھ دنوں سے گجرات میں بڑھ رہے کورونا معاملات کے پیش نظر اٹھایا ہے ۔


گجرات میں پیر کو کورونا وائرس کے 890 نئے معاملات درج کئے گئے تھے ۔ اس کے بعد ریاست میں کل کورونا متاثرین کی تعداد دو لاکھ 79 ہزار 97 ہوگئی ہے ۔ ریاست میں 594 لوگ کورونا وائرس سے شفایاب ہوئے تھے ۔ پیر کو سورت میں 262 ، احمد آباد میں 209 ، وڈودرہ میں 97 اور راجکوٹ میں 95 نئے معاملات سامنے آئے تھے ۔


اس سے پہلے مہاراشٹر حکومت نے احتیاطی قدم اٹھاتے ہوئے ناگپور میں 31 مارچ تک لاک ڈاون لاگو کردیا تھا ۔ وہیں عثمان آباد اور لاتور سمیت کچھ اضلاع میں نائٹ کرفیو بھی لگایا گیا ہے ۔ پنجاب میں بھی کچھ شہروں میں نائٹ کرفیو لاگو کیا گیا ہے ۔ پنجاب میں جالندھر ، نواشہر اور شاہ پور میں کورونا وائرس کا نیا اسٹرین ملنے کے بعد حالات تشویشناک ہیں ۔ ایسے میں ریاست کے آٹھ شہروں میں نائٹ کرفیو لگایا گیا ہے ۔ ان میں موہالی ، جالندھر اور لدھیانہ بھی شامل ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 16, 2021 04:20 PM IST