ہوم » نیوز » عالمی منظر

اوبامہ، بش اور کلنٹن امریکیوں میں اعتماد قائم کرنے کے لئے کورونا ویکسین لینے کو تیار

امریکہ کے سابق صدور بارک اوبامہ، جارج ڈبلیو بش اور بل کلنٹن نے کہا ہے کہ امریکی شہریوں میں کورونا وائرس ویکسین کے تئیں اعتماد پیدا کرنے کے لئے وہ پہلے خود ویکسین لینے کے لئے تیار ہیں۔ یہ بیانات ایسے وقت میں آئے ہیں جب امریکہ میں دسمبر کے وسط میں فائزر اور ماڈرنا کی کیرونا وائرس ویکسین کی پہلی کھیپ پہنچنے کی امید ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 04, 2020 06:33 PM IST
  • Share this:
اوبامہ، بش اور کلنٹن امریکیوں میں اعتماد قائم کرنے کے لئے کورونا ویکسین لینے کو تیار
اوبامہ، بش اور کلنٹن امریکیوں میں اعتماد قائم کرنے کے لئے کورونا ویکسین لینے کو تیار

واشنگٹن۔ امریکہ کے سابق صدور بارک اوبامہ، جارج ڈبلیو بش اور بل کلنٹن نے کہا ہے کہ امریکی شہریوں میں کورونا وائرس ویکسین کے تئیں اعتماد پیدا کرنے کے لئے وہ پہلے خود ویکسین لینے کے لئے تیار ہیں۔ یہ بیانات ایسے وقت میں آئے ہیں جب امریکہ میں دسمبر کے وسط میں فائزر اور ماڈرنا کی کیرونا وائرس ویکسین کی پہلی کھیپ پہنچنے کی امید ہے۔


اوبامہ نے بدھ کو سیرئس ایکس ایم ریڈیو کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا کہ انہیں امریکی متعدی امراض کے ماہر انتھنی فاؤجی پر مکمل اعتماد ہے۔ انہوں نے بتایا کہ فاؤجی انہیں کہتے ہیں کہ یہ ویکسین محفوظ ہے تو وہ اسے ضرور لینے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’’میں اسے لوں گا اور میں اسے ٹی وی پر لے سکتا ہوں یا اسے فلمایا جاسکتا ہے تاکہ لوگوں کو پتہ چل سکے کہ مجھے اس سائنس پر اعتماد ہے۔‘


اسی دن سابق صدر جارج ڈبلیو بش کے چیف آف اسٹاف فریڈی فورڈ نے سی این این کو بتایا کہ سابق صدر نے فاؤجی اور وہائٹ ہاؤس کی کووڈ۔19 ٹیم کے ساتھ یہ جاننے کے لئے بات کی تھی کہ وہ ویکسینیشن کو بڑھاوا دینے میں مدد کرنے کے لئے کیا کرسکتے ہیں۔ فورڈ نے بتایا کہ ’’سب سے پہلے ویکسین کو محفوظ تصور کیا جانا چاہئے اور ان لوگوں کو ترجیح کی بنیاد پر ویکسینیشن کی جانی چاہئے جنہیں سب سے زیادہ ضرورت ہے۔ اس کے بعد بش خوشی سے کیمرے کے سامنے ایسا کریں گے۔‘‘


وہیں، بل کلنٹن بھی عوامی طور سے ٹیکہ لینے کے لئے تیار ہیں۔ ان کے ترجمان انجل اوکا نے بتایا کہ ’’صدر کلنٹن ویکسین مہیا ہوتے ہی پبلک ہیلتھ افسران کے ذریعہ طے شدہ ترجیحات کی بنیادپر  ویکسینیشن ضرور کروائیں گے۔ اگر امریکی شہریوں میں ٹیکے کے تئیں اعتماد پیدا کرنے میں مدد ملی تو وہ اسے عوامی طور پر بھی لے سکتے ہیں۔‘‘ نومبر کے گیلپ پول کے مطابق امریکی شہریوں میں کورونا وائرس ویکسینیشن کا خوف کم ہونے لگا ہے لیکن چالیس فیصد امریکی بالغوں کا اب بھی کہنا ہے کہ وہ ٹیکہ نہیں لیں گے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 04, 2020 06:32 PM IST