ہوم » نیوز » وطن نامہ

Nationwide lockdown: کووڈ۔19 کو روکنے کیلئے لاک ڈاؤن ہی آخری حل، لیکن اس پر کیا جارہا ہے تبادلہ خیال: مرکز

کیا حکومت ملک بھر میں کووڈ۔19 کیسوں میں اضافہ کی وجہ سے قومی لاک ڈاؤن (Nationwide lockdown) نافذ کرے گی؟ مرکزی وزارت صحت (Union Health Ministry) نے دنیا کے بدترین وائرس پھیلنے سے بچنے کے لئے لاک ڈاؤن کو مسترد نہیں کیا ہے۔

  • Share this:
Nationwide lockdown: کووڈ۔19 کو روکنے کیلئے لاک ڈاؤن ہی آخری حل، لیکن اس پر کیا جارہا ہے تبادلہ خیال: مرکز
بڑی خبر! راجستھان میں 10 مئی سے 24 مئی تک مکمل لاک ڈاون ، 31 تک شادی پروگرام پر روک

ہندوستان میں عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19) بحران کے دوران ملک بھر میں لاک ڈاؤن کے بارے میں مرکز کا کہنا ہے کہ آپشن پر تبادلہ خیال کیا جارہا ہے۔ کیا حکومت ملک بھر میں کووڈ۔19 کیسوں میں اضافہ کی وجہ سے قومی لاک ڈاؤن (Nationwide lockdown) نافذ کرے گی؟ مرکزی وزارت صحت (Union Health Ministry) نے دنیا کے بدترین وائرس پھیلنے سے بچنے کے لئے لاک ڈاؤن کو مسترد نہیں کیا ہے۔ بدھ کے روز پریس بریفنگ میں نیتی آیوگ کے رکن وی کے پال (VK Paul ) نے کہا کہ ملک گیر لاک ڈاؤن کا آپشن زیر بحث ہے۔ وی کے پال قومی کووڈ۔19 ٹاسک فورس کے سربراہ بھی ہیں۔


ایسے وقت میں جب ماہرین اور سیاسی رہنماؤں نے وزیر اعظم کو مشورہ دیا ہے کہ وہ ہندوستان میں کووڈ۔19 کی تباہ کن دوسری لہر سے نمٹنے کے لئے ایک قومی لاک ڈاؤن نافذ کریں۔ اس وقت نیتی آیوگ کے رکن نے کہا کہ ریاستوں کو پہلے ہی مقامی نائٹ کرفیو اور اضلاع میں پابندیاں عائد کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ 10 فیصد سے زیادہ آزمائشی پوزیٹیٹیٹی ریٹ اور آئی سی یو بیڈز پر 60 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا ہے۔


وی کے پال نے کہا کہ ’’پابندیوں کی اس حد کے علاوہ اگر مزید کسی چیز کی بھی ضرورت ہو تو ان اختیارات پر ہمیشہ تبادلہ خیال کیا جاتا ہے اور جن فیصلوں کی ، ضرورت ہوتی ہے۔ اس پر عمل آواری ہوگی‘‘۔


اسی دوران قومی کووڈ۔19 ٹاسک فورس کے سربراہ نے کہا کہ ریاستوں کو پہلے ہی اہم ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔

چونکہ آکسیجن اور طبی سامان کی کمی کے دوران ہندوستان کووڈ۔19 کا مقابلہ کررہا ہے۔اعلی ماہرین صحت اور سیاسی حلیفوں نے ملک گیر لاک ڈاؤن کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں وائرس کی منتقلی کے اس سلسلے کو توڑنے کے لئے یہ واحد راستہ بچ سکتا ہے۔

امریکہ کے اعلی صحت عامہ کے ماہر ڈاکٹر انتھونی فوکی نے ہندوستان کی صورتحال کو "انتہائی مایوس کن" قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے حکومت کو عارضی طور پر عارضی اسپتالوں کی تعمیر کے لئے اپنے تمام وسائل بشمول مسلح افواج کو مارشل کرنے کی تجویز دی اور دوسرے ممالک سے بھی مدد کی اپیل کی صرف مواد بلکہ اہلکار۔

ڈاکٹر فوکی نے واضح کیا کہ جب لاک ڈاؤن نافذ کیا جاتا ہے تو یہ یقینی طور پر وائرل پھیلنے کی حرکیات میں مداخلت کرتا ہے اور آپ انفیکشن کے تسلسل اور منتقلی میں روک کرسکتے ہیں۔ دوسرے امیونولوجسٹ نے دوسرے ممالک کے تجربے کا حوالہ دیتے ہوئے ان کی حمایت کی ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 07, 2021 10:09 AM IST