ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کووڈ ویکسینشن سینٹر پر اڑیں social distancing کی دھجیاں، سامنے آئیں تصویریں

مدھیہ پردیش کے وزیر داخَلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر نوجوانوں بہت جوش ہے اور بڑی تعداد میں نوجوان گھروں سے نکل کر کورونا ٹیکہ کاری کے مرکزپہنچ کر ٹیکہ لگوارہے ہیں ۔

  • Share this:
کووڈ ویکسینشن سینٹر پر اڑیں social distancing کی دھجیاں، سامنے آئیں تصویریں
مدھیہ پردیش کے وزیر داخَلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر نوجوانوں بہت جوش ہے اور بڑی تعداد میں نوجوان گھروں سے نکل کر کورونا ٹیکہ کاری کے مرکزپہنچ کر ٹیکہ لگوارہے ہیں ۔

مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ ریاستی حکومت کے ذریعہ آج سے ریاست کے سبھی اضلاع میں اٹھارہ سال سے چوالیس سال کے بیچ کے لوگوں کو کورونا ویکسین Covid 19 Vaccination لگانے کاانتظام تو کیا لیکن بیشتر ویکسینشن سینٹر کووڈ ضابطوں کی خلاف ورزی ہی دیکھی گئی ۔ حکومت نے ویکسینشن سینٹر پر عوام کے ہجوم کو ان کے جوش سے تعبیرکیا تو اپوزیشن نے کورونا قہر میں اسے حکومت کی ناکامی قرار دیا ہے ۔  کورونا قہر میں کوروناٹیکہ کاری کی بڑھتی ڈیمانڈ کو دیکھتےہوئے حکومت کی جانب سے پہلے یکم مئی سے اٹھارہ سال سے اوپر کے لوگوں کو کورونا ٹیکہ لگانے کا اعلان کیاگیاتھا مگر کورونا ویکسین کی عدم دستیابی کے سبب یکم مئی سے حکومت کورونا ٹیکہ کاری مہم کو شروع نہیں کرسکی ۔ حکومت کے ذریعہ آج سے اٹھارہ سال سے اوپر کے لوگوں کے لئے ریاستی سطح پر کورونا ٹیکہ کاری مہم کو شروع تو کیا لیکن ریاست کے سبھی اضلاع میں صرف ایک سینٹر پر ہی ٹیکہ کاری کی جاسکی۔ وہ بھی سبھی اضلاع میں صرف نوجوانوں کو ہی کورونا ٹیکہ لگایاجا سکے۔ حکومت کی جانب سے کوئی واضح ہدایت نہیں ہونے کے سبب بیشتر ویکسینشن سینٹر پر کورونا ٹیکہ لگوانے والوں کا ہجوم دیکھا گیا۔


مدھیہ پردیش کے وزیر داخَلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر نوجوانوں بہت جوش ہے اور بڑی تعداد میں نوجوان گھروں سے نکل کر کورونا ٹیکہ کاری کے مرکزپہنچ کر ٹیکہ لگوارہے ہیں ۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کورونا ٹیکہ سینٹر پر سوشل ڈسٹنس کی دھجیاں اڑ رہی ہیں اور اپوزیشن نے سرکاری کی ناکامی سے تعبیر کیا ہے تو وزیر موصوف کا کہنا کانگریس کو ہر کام میں صرف عیب ہی دکھائی دیتا ہے۔ یہ وہی کانگریس کے لوگ جو پہلے کہتے تھے کہ یہ بی جے پی کی ویکسین،پھر کہا گیا کہ پی ایم کب لگوائیں گے اور جب پی ایم مودی جی نے ویکسین لگوالی تو یہ کہا جانے لگا کہ عوام کو لگانے کے لئے تاریخ نہیں بتائی جا رہی ہے ۔اب تاریخ بھی بتا دی اور عوام بڑی تعداد میں کورونا کے خلاف بیدار ہوکر ٹیکہ لگوارہے ہیں تو ان کےپیٹ میں درد ہو رہا ہے ۔




کانگریس کے لوگ اس کورونا قہر میں بھی صرف سیاست کررہے ہیں کہیں کوئی کانگریس کا ورکر خدمت کرتانظر آیا ہو کسی کو تو بتائے۔ کانگریس کے اس گناہ کے لئے عوام اسے کبھی معاف نہیں کرینگے۔ وہیں مدھیہ پردیش کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر پی سی شرما کہتے ہیں کہ اب حکومت کی اس سے بڑی نا کامی کیا ہوگی کہ کروڑوں لوگوں کے بیچ پوری ریاست میں صرف ایک سو چار سینٹر بنائے گئے ہیں ۔حکومت ویکسین کا انتظام نہیں کر پا رہی ہے اور اپنی ناکامی کوچھپانے کے لئے مسلسل جھوٹ پر جھوٹ بو ل رہی ہے ۔ آج کورونا ٹیکہ کاری کے لئے ویکسینش سینٹر پر بھیڑ اسی لئے کیونکہ حکومت نے کوئی واضح ہدایت جاری نہیں کی تھی ۔

یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے ملک کی عوام کی صحت کی فکر کو چھوڑکر کورونا ویکسین کو بیرون ملک کے لوگوں کو بیچ دیاتھا اور آج چھوٹے چھوٹے غریب ممالک کے سامنے ہاتھ پھیلائے بھیک مانگ رہے ہیں ۔ ہمارا تو یہ بھی کہنا ہے کہ پی ایم کیر فنڈ سے مدھیہ پردیش کے اسپتالوں کے لئے جو طبی آلات خریدے گئے ہیں وہ انتہائی گھٹیا ہیں ان کی جانچ کی جانا چاہیئے۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 05, 2021 09:12 PM IST