ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کوروناوائرس ویکسین کی منظوری پر وزیر اعظم نریندر مودی نے پیش کی مبارکباد، کہی یہ بڑی بات

کورونا وائرس ویکسین کو لیکر ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا (DCGI) نے بڑا اعلان کر دیا ہے۔ ڈی سی جی آئی نے سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کی کووی شیلڈ (Covishield) ویکسین اور بھارت بایوٹیک کی کوویکسین (Covaxin)کو ہنگامی استعمال کیلئے منظوری دے دی ہے۔ اب ان دونوں کورونا ویکسین کو عام لوگوں کو لگایا جا سکے گا۔

  • Share this:
کوروناوائرس ویکسین کی منظوری پر وزیر اعظم نریندر مودی نے پیش کی مبارکباد، کہی یہ بڑی بات
کوروناوائرس ویکسین کے ہنگامی استعمال کی منظوری پر پی ایم مودی نے پیش کی مبارکباد، کہا۔ ملک کیلئے فخر کا لمحہ

ملک میں  کورونا وائرس ویکسین کو لیکر ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا (DCGI)  نے بڑا اعلان کر دیا ہے۔ ڈی سی جی آئی نے  سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کی کووی شیلڈ  (Covishield) ویکسین اور بھارت بایوٹیک کی کوویکسین  (Covaxin)کو ہنگامی استعمال کیلئے منظوری دے دی ہے۔  (DCGI) سے منظوری ملنے کے بعد ان دونوں کورونا وائرس ویکسین کو اب عام لوگوں کو لگایا جا سکے گا۔ سائنسدانوں کی اس کامیابی پر وزیر اعظم نریندر مودی نے پورے ملک کو مبارکبار دی ہے۔


وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا، ہر ہندستانی کو فخر ہوگا کہ جن دو ٹیکورں کو ایمرجنسی استعمال کی منظوری دی گئی ہے وہ ہندستان میں بنے ہیں۔ یہ خود انحصار ہندستان کے خواب کو پورا کرنے کے ہمارے سائنسداں کے خواب کی عکاسی کرتا ہے جس کا اصل مقصدحیثیت مریضوں کی دیکھ بھال اور ہمدردی ہے




سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کے سی ای او ادار پوناوالا نے کورونا ویکسین کو منظوری ملنے پر خوشی ظاہر کی ہے۔  انہوں نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا، سبھی کو نیا سال مبارک ہو! سبھی خطرے جو سیرم انسٹی ٹیوٹ نے ویکسین کو اسٹاک کرنے کیلئے اٹھائے تھے اس کا آخر کار بہتر نتیجہ سامنے آیا ہے۔ ہندستان کا پہلا کووڈ۔19  ویکسین اگلے ہفتے تک آپ کے سامنے ہوگا۔ یہ پوری طرح سے محفوظ اور بااثر ہے۔



نئی دہلی: ملک میں کورونا وائرس کی ویکسین کے ٹیکہ کاری کی تیاریاں زوروں پر ہیں۔ ہفتے کے روز بھی ملک میں اس کی تیاریوں کو دیکھنے کے لئے ڈرائی رن کیا گیا۔ دریں اثنا ، اتوار کے روز ، ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا (DCGI) نے ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے ویکسین (Covid 19 Vaccine) کے بارے میں معلومات دی۔  اس دوران بتایا گیا کہ ملک میں سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا   (SII) کی کووی شیلڈ (Covishield) ویکسین اور بھارت بایوٹیک کی کوویکسین  (Covaxin)  کو ہنگامی استعمال کیلئے منظوری دی گئی ہے ۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ کووی شیلڈ کو آکسفورڈ یونیورسٹی کے ساتھ مل کر بنا رہا ہے۔

ڈرگس کنٹرولر جنرل آف انڈیا ا (DCGI)  نے  جانکاری دی ہے کہ کووی شیلڈ اور ویکسین پوری طرح سے محفوظ ہیں۔ ٹیکہ کاری  کی دوران ان ویکسین کی دو۔دو ڈوز دی جائیں گی۔ وہیں کیڈل ہیلتھ کیئر کے کلینک ٹرائل کے تیسرے مرحلے کو بھی منظوری دے دی گئی ہے۔

 



ڈی سی جی آئی نے میڈیا سے بات چیت میں کہا، اگر کسی بھی چیز میں ذرا بھی خامی ہوگی تو ہم اجازت نہیں دیں گے۔ ویکسین 110   فیصدی محفوظ ہے۔ اس کے کچھ نارمل سائڈ افیکٹ ہیں۔ جیسے ہلکا بخار، درد اور الرجی۔ اس سے نامرد ہونے کی بات بالکل غلط ہے۔

 



گزشتہ سال 27 جنوری کو ہندستان میں کووڈ۔19 (Coronavirus) کا پہلا کیس ملا تھا۔ تب سے لیکر اب تک اس خطرناک وائرس کی زد میں ملک کے ایک کروڑ سے زیادہ لوگ آ چلے ہیں لیکن اب اچھی خبر آ گئی ہے۔ ڈی سی جی آئی نے پریس کانفرنس کرکے بتایا کہ کورونا وائرس کی دو ویکسین آکسفورڈ اور ایسٹریزینکا کی کووڈ شیلڈ Covishield) اور بھارت بایوٹک کی کو ویکسین (Covaxin) کو ایمرجنسی استعمال کیلئے منظوری دے دی ہے۔ ویکسینینش کا کام جلد شروع ہونے والا ہے لیکن مکل کی 130 کروڑ آبادی کو ویکسین لگانا آسان چینلچ نہیں ہوگا۔ لہذا اس کیلئے مودی حکومت نے جنگی سطح پر تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔ مرکزی وزیر صحت ہرش وردھن نے کہا کہ ویکسینیشن کیلئے چناؤ کی طرح بوتھ سطح پر تیاری کی جارہی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومت نے اس کے لئے 20 وزارتیں اور 23 محکمے تعینات کیے ہیں۔

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jan 03, 2021 12:32 PM IST