ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر اعظم نریندر مودی 16 جنوری کو شروع کریں گے ویکسینیشن کیمپئن، COWIN ایپ بھی کریں گے لانچ

وزیر اعظم نریندر مودی 16 جنوری کو صبح 11 بجے ویکسینیشن پروگرام کی شروعات کریں گے۔ اس موقع پر پی ایم مودی ویکسینیشن کیلئے بنائی گئی کوون ایپ (COWIN) کو بھی لانچ کریں گے۔

  • Share this:
وزیر اعظم نریندر مودی 16 جنوری کو شروع کریں گے ویکسینیشن کیمپئن، COWIN  ایپ بھی کریں گے لانچ
وزرائے اعلیٰ کے ساتھ میٹنگ کے بعد وزیر اعظم مودی نے کہا- دونوں ویکسین بھروسے مند

Corona Vaccination in India: کوروناکےخلاف ٹیکاکاری کا انتظار اب ختم ہونے کوہے۔ حکومت کی جانب سے سولہ جنوری سے ملک بھرمیں ٹیکہ کاری کی شروعات کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ اس کے تحت تین کروڑ ہیلتھ ورکروں اور فرنٹ لائن ورکرس کو ٹیکہ لگایاجائے گا۔ واضح ہو کہ سنیچر کو وزیراعظم نریندر مودی کی صدارت میں اعلیٰ سطح کی میٹنگ ہوئی تھی جس میں ا س ویکسینیشن کے حوالے سے فیصلہ لیاگیا۔ میٹنگ میں وزیراعظم نے تمام ریاستوں اور مرکز کے زیرانتظام ریاستوں میں ٹیکہ کاری کی تیاریوں کاجائزہ لیا۔ وزیر اعظم نریندر مودی 16 جنوری کو صبح 11 بجے ویکسینیشن پروگرام کی شروعات کریں گے۔ اس موقع پر پی ایم مودی ویکسینیشن کیلئے بنائی گئی کوون ایپ (COWIN) کو بھی لانچ کریں گے۔

تین مرحلوں میں ہوگا ویکسینیشن

کووڈ۔10 کا ویکسینیشن تین مرحلوں میں کیا جائے گا۔ پہلے مرحلے میں فرنٹ لائن ورکرس شامل ہوں گے۔ اس کے بعد ایمرجنسی ورکرس کا ویکسینیشن ہوگا۔ وہیں تیسرے مرحلے میں ویسے لوگ جو پہلے سے ہی کسی بیماری میں مبتلا ہیں۔ ان کا ویکسینیشن کیا جائے گا۔ ایک شخص کے ویکسینیشن کا وقت تقریبا تیس منٹ کا ہوسکتا ہے۔

ویکسینینش کے پورے پروسز کیلئے بنایا گیا یہ ایپ

ڈرگ کنٹرولر جنرل آف انڈیا کی جانب سے کووڈ (Covid-19) کے علاج کیلئے دو ویکسینیشن کے استمعال کو منظوری مل گئی ہے جن میں کووی شیلڈ (Covishield) اور کو ویکسین (Covaxine) شامل ہیں۔ ویکسینیشن کے پروے پروسز کی جانکاری کیلئے کوون ایپ لانچ کیا جائے گا۔


وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ پہلے مرحلے میں ہمارے فرنٹ لائن ورکرس، صفائی ملازم، سول سروینٹس اور دفاعی کاموں میں لگے لوگوں کی ٹیکہ کاری کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سبھی ریاستوں میں طبی ملازمین کی تعداد تقریباً 3 کروڑ ہے۔ پہلے مرحلے میں، ان تین کروڑ لوگوں کی ٹیکہ کاری کا خرچ مرکزی حکومت برداشت کرے گی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اگر کورونا وائرس کی ویکسین کا کوئی سائیڈ افیکٹ سامنے آتا ہے تو ہم نے اس کے لئے بھی انتظامات کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس پہلے سے ہی اس طرح کے حالات کے لئے یونیورسل ٹیکہ کاری پروگرام کے تحت ایک تنتر ہے، ہم نے اسے خصوصی طور پر کووڈ ٹیکہ کاری کے لئے مضبوط کیا ہے۔
واضح رہے کہ ڈرگ کنٹرولر جنرل آف انڈیا (DCGI) کی طرف سے گزشتہ دنوں ملک میں کورونا وائرس کی دو ویکسین کو ایمرجنسی استعمال کی منظوری دے دی گئی ہے۔ ان میں سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کی کووی شیلڈ اور بھارت بایو ٹٰک کی کوویکسین شامل ہیں۔ وہیں پورے ملک میں ٹیکہ کاری کا ڈرائی رن یعنی کہ ٹرائل بھی پورا ہوگیا ہے۔ ٹیکہ کاری مہم میں 19 مرکزی وزارت شامل ہوں گے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jan 13, 2021 02:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading