ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کورونا کی فرضی رپورٹ بنانے کے الزام میں  پولیس نےایک شخص کو کیا گرفتار: جانیں پورا معاملہ

کورونا کے بڑھتے ہوئے خطرے نے ایک بار پھر مہاراشٹرا کے ساتھ ساتھ پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ مہاراشٹرا میں مسلسل کوروناکے مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔

  • Share this:
کورونا کی فرضی رپورٹ بنانے کے الزام میں  پولیس نےایک شخص کو کیا گرفتار: جانیں پورا معاملہ
کورونا کے بڑھتے ہوئے خطرے نے ایک بار پھر مہاراشٹرا کے ساتھ ساتھ پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ مہاراشٹرا میں مسلسل کوروناکے مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔

کورونا کے بڑھتے ہوئے خطرے نے ایک بار پھر مہاراشٹرا کے ساتھ ساتھ پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ مہاراشٹرا میں مسلسل کوروناکے مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ حکومت کی جانب سے مسلسل لوگوں کوضابطے پر عمل کرنے کی ہدایت کی جارہی ہے ، لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جو اپنے مفاد کے لئے لوگوں کی زندگیوں سے کھیل رہے ہیں ، ایسا ہی ایک جعلی فراڈ کا معاملل سامنے آیا ہے۔


یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا جب ممبئی کے تھارو کیر ٹیکنالوجی کمپنی میں لیگل ایکزیٹیو کے عہدہ پر کرنے والے بیرو دیو سرودے نےبہولیس میں شکایت درج کرائی کہ انبکی کمپنی میں سروس پر و واڈر کلائنٹ کے عہدہ پر کام کرنے والے ملزم ساجد خان نے رمیش کھبرانی نام کے ایک مریض سے اس کے خون اور دیگر نمونوں رپورٹ آنےسے پہلے ہی تھائرو کیر ٹکنالوجی کمپنی کےلیٹرہیڈپر کورونا رپورٹ نگیٹو لکھ کر مریض کو دے دیا تھا۔ رمیش کھبرانی کی رپورٹ سامنے آئی تو پتہ چلا کہ وہ کورونا مثبت ہیں۔ شیواجی نگر پولیس نے اس معاملے میں ملزم عبد ال ساجد خان کو گرفتار کرلیا ،ضابطے کی خلاف ورزی کے معاملے اور عالمی وباء ایکٹ کی خلاف ورزی ، کمپنی کے قواعد کی خلاف ورزی کے معاملے کیس درج کیا گیا ہے.اس کے ساتھ پولیس یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ اس معاملے میں کون کون کوگ شامل ہیں۔


پہلے ہی ممبئی سمیت پورے مہاراشٹر میں ایک بار پھر کورونا کی وبا پھیل رہی ہے۔ مہاراشٹرا میں گذشتہ 8 دنوں میں کورونا کے تقریبا 80،000 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ ریاست میں مریضوں کی کل تعداد اب بڑھ کر 22،38،398 ہوگئی ہے۔ ابھی تک ، مہاراشٹر میں 52،556 اموات ہوچکی ہیں اور اب تک پورے مہاراشٹر میں فعال مریضوں کی تعداد 95322 ہوگئی ہے۔


اب اس طرح کے واقعے کے بعد ، مہاراشٹرا پولیس کے سامنے ایک بڑا چیلنج پیدا ہوگیا ہے ، کیسے معلوم کیا جائے کہ مہاراشٹرا میں اس طرح کے اور کتنے گروہ سرگرم ہیں۔ کیونکہ اگر مثبت رپورٹ کو منفی ظاہر کیا گیا تو معاشرے میں کورونا کے متاثرہ کیسز مزید پھیل جائیں گے ، اور دوسرے کورونا کی اس لہر کو روکنا ناممکن ہوگا۔

رپورٹ: وسیم انصاری
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 10, 2021 04:11 PM IST