ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کووڈ۔19 مریضوں کے اسپتال میں داخلے کیلئے Positive Test Report لازمی نہیں : نئی گائیڈ لائنس

پالیسی دستاویز میں کہا گیا ہے کہ کہ ’’مریض مرکوز اقدام (patient-centric measure) پر مبنی مقصد کووڈ۔19 سے متاثرہ مریضوں کے فوری، موثر اور جامع علاج کو یقینی بنایا جانا ضروری ہے۔ جس کے لیے کورونا کی مثبت ٹیسٹ رپورٹ (Positive Test Report) ضروری نہیں ہے۔

  • Share this:
کووڈ۔19 مریضوں کے اسپتال میں داخلے کیلئے Positive Test Report لازمی نہیں : نئی گائیڈ لائنس
پالیسی دستاویز میں کہا گیا ہے کہ کہ ’’مریض مرکوز اقدام (patient-centric measure) پر مبنی مقصد کووڈ۔19 سے متاثرہ مریضوں کے فوری، موثر اور جامع علاج کو یقینی بنایا جانا ضروری ہے۔ جس کے لیے کورونا کی مثبت ٹیسٹ رپورٹ (Positive Test Report) ضروری نہیں ہے۔

حکومتی ہدایت کے مطابق کورونا کے مریضوں کو کسی بھی وجہ سے علاج و معالعہ اور خدمات سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔ اس کے مطابق اگر کسی کو کورونا وائرس کا شبہ ہے تو ہر طرح سے اس کا علاج ضروری ہے۔ کووڈ۔19 کے علاج کے لیے ہسپتال میں داخلہ لینے کے لئے مثبت ٹیسٹ رپورٹ (Positive Test Report) ضروری نہیں ہے۔ اس کے بغیر بھی علاج و معالجہ کیا جانا ضروری ہے۔ مرکزی وزارت صحت (Union health ministry) نے ہفتے کے روز کووڈ-19 مریضوں کو ان کے لئے مختلف قسم کی سہولیات سے استفادہ کے لیے پالیسی میں ترمیم کی ہے، یہاں تک کہ اس ہلاکت خیز انفیکشن کی ایک دوسری لہر بھی پورے عروج پر ہے۔


پالیسی دستاویز میں کہا گیا ہے کہ کہ ’’مریض مرکوز اقدام (patient-centric measure) پر مبنی مقصد کووڈ۔19 سے متاثرہ مریضوں کے فوری، موثر اور جامع علاج کو یقینی بنایا جانا ضروری ہے۔ جس کے لیے کورونا کی مثبت ٹیسٹ رپورٹ (Positive Test Report) ضروری نہیں ہے۔ نئی ہدایات کا اطلاق مرکز، ریاستی حکومتوں اور یونین ٹیرٹری انتظامیہ کے ساتھ ساتھ تمام نجی ہسپتالوں میں ہوگا۔ جو کہ کورونا علاج کے لیے مجاز ہے۔


تفصیلی ہدایات یہ ہیں:


کووڈ۔19 وائرس سے متاثرہ مریضوں کے علاج کے لیے مثبت ٹیسٹ کی ضرورت لازمی نہیں ہے۔ مشتبہ کیس کووڈ کیئر سنٹرز، کووڈ ہیلتھ سینٹرز یا ڈی ایچ سی کے مشتبہ وارڈ میں داخل کیا جائے گا۔
کسی بھی مریض کو کسی بھی وجہ سے علاج اور خدمات سے انکار نہیں کیا جائے گا۔ اس میں آکسیجن یا ضروری ادویات جیسی دوائیں شامل ہیں یہاں تک کہ اگر مریض کا تعلق مختلف شہر سے ہی کیوں نہ ہو۔
کسی بھی مریض کو اس بنیاد پر داخلے سے انکار نہیں کیا جائے گا کہ وہ ایک درست شناختی کارڈ تیار کرنے کے قابل نہیں ہے جس کا تعلق اس شہر سے نہیں ہے جہاں اسپتال واقع ہے۔
ہسپتالوں میں داخلہ شدید ضرورت پر مبنی ہونا چاہئے۔ یہ یقینی بنانا چاہئے کہ بستروں پر ایسے افراد زیر قبضہ نہیں ہیں جنہیں ہسپتال میں شریک کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 11, 2021 11:06 AM IST