ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کووڈ۔ 19: پنجاب میں کرفیو کی خلاف ورزی کرنا پڑا بھاری، 111 لوگ ہوئے گرفتار

چنڈی گڑھ: پنجاب پولیس نے منگل کو ریاست میں کوروناوائرس کے مد نظر کرفیو نافذ کرفی کی خلاف ورزی کرنے کے 232 معاملے درج کئے ہیں۔ پولیس نے ریاست کے لوگوں کے گھروں تک ضروری سامان کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے ایک جامع حکمت عملی پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس (Director General of police) دنکر گپتا نے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ سب سے زیادہ 38 ایف آئی آر ایس ایس نگر (موہالی) ، 34 امرتسر (دیہی) میں اور 30 ترن ترن اور سنگرور میں درج کی گئیں۔

  • Share this:
کووڈ۔ 19: پنجاب میں کرفیو کی خلاف ورزی کرنا پڑا بھاری، 111 لوگ ہوئے گرفتار
علامتی تصویر

چنڈی گڑھ: پنجاب پولیس نے منگل کو ریاست میں کوروناوائرس کے مد نظر کرفیو نافذ کرفی کی خلاف ورزی کرنے کے 232 معاملے درج کئے ہیں۔ پولیس نے ریاست کے لوگوں کے گھروں تک ضروری سامان کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے ایک جامع حکمت عملی پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس (Director General of police) دنکر گپتا نے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ سب سے زیادہ 38 ایف آئی آر ایس ایس نگر (موہالی) ، 34 امرتسر (دیہی) میں اور 30 ترن ترن اور سنگرور میں درج کی گئیں۔


انہوں نے بتایا کہ زیادہ تر گرفتاریاں ترن تارن کی ہیں اور 43 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ امریندر سنگھ کی طرف سے کرفیو کے بارے میں جاری کردہ تفصیلی ہدایات کے بعد  ڈی جی پی نے پولیس کے اعلی عہدیداروں کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ میٹنگ کی جس میں لوگوں کو دودھ ، کھانے کی اشیاء ، ادویات جیسی ضروری اشیا فراہم کرنے کا نظام بنانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔


پنجاب کے وزیر اعلی امریندر سنگھ کے دفتر کی جانب سے اطلاع دی گئی کہ ریاست میں 94000 سے زیادہ این آر آئی(NRI)  اور غیر ملکی واپس آئے ہیں۔ ان میں سے بہت سے لوگوں کو ٹریک کر لیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ تقریبا تیس ہزار لوگوں کو آٓئیسولیٹ کیا گیا یے۔ وہیں دیگر لوگوں کا پتہ لگانے کی کوشش کی جارہی ہے،  الگ تھلگ ہوچکے ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ ، دوسرے لوگوں کو تلاش کرنے کی بھی کوششیں کی جارہی ہیں۔


 

 
First published: Mar 25, 2020 03:53 AM IST