ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رانچی کا ہندپیڑھی بنا کورونا ہاٹ اسپاٹ: پولیس گشت اور ڈرون کیمروں سے کی جارہی ہے نگرانی

علاقے میں سینٹایزیشن اور پولیس پیٹرولنگ اور ڈرن کیمروں سے نگرانی گیے جانے سمیت علاقے کے لوگوں کو سہولتیں فراہم کرنے کا عمل جاری ہے ۔

  • Share this:
رانچی کا ہندپیڑھی بنا کورونا ہاٹ اسپاٹ: پولیس گشت اور ڈرون کیمروں سے کی جارہی ہے نگرانی
ہندپیڑھی میں کورونا پازیٹیو مریض کی تعداد میں اضافہ

جھارکھنڈ کے دارالحکومت رانچی کے قلب میں واقع کثیر مسلم آبادی والا علاقہ ہندپیڑھی کورونا پازیٹیو ہاٹ اسپاٹ علاقہ بن گیا ہے ۔ اس علاقے میں اب تک11کورونا پازیٹیو مریض پایے گیے ہیں ۔ سب سے پہلا معاملہ گذشتہ 31 مارچ کو پایا گیا تھا ۔ تبلیغی جماعت میں شامل 22 سالہ ملیشیائی خاتون میں کورونا پازیٹیو پایا گیا تھا ۔ اسکے بعد اسی مقام سے 54 سالہ خاتون کورونا پازیٹیو کی دوسری مریضہ کا انکشاف ہوا ۔ پھر چند دنوں بعد ہی اس دوسری مریضہ کے شوہر سمیت انکے پانچ اہل خانہ میں کورونا پازیٹیو کا انکشاف ہوا۔ سبھی کو ریاست کے سب سے بڑے اسپتال ریمس کے کوویڈ وارڈ میں اعلاج کے لیے داخل کرایا گیا جہاں اعلاج کے دوران 60 سالہ شخص کی کورونا سے موت ہو گئی۔ مقامی لوگ اس علاقے میں کورونا پازیٹیو مریض کی تعداد میں اضافہ کو کورونا پازیٹیو ہونے والی ملیشیائی خاتون کو اسکی بڑی وجہ مان رہے ہیں۔


سماجی کارکن نوشاد خان کا کہنا ہے کہ اس ملیشیائی خاتون کی وجہ سے ہندپیڑھی کے علاقے میں کورونا پازیٹیو مریض کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ۔واضح رہے کہ اس معاملہ کے انکشاف میں آنے کے بعد تبلیغی جماعت کے تمام 18 غیر ملکی باشندوں کے علاوہ درجنوں مشتبہ افراد کو کوارنٹین کر دیا گیا ہے ۔وہیں کورونا پازیٹیو مریض کا علاج ریمس کے کوویڈ وارڈ میں کیا جا رہا ہے ساتھ ہی میڈیکل ٹیم کے ذریعہ ہندپیڑھی کے لوگوں کی نشاندھی کر جانچ کی جارہی ہے ۔ لیکن علاقے کے بیشتر لوگ اس مہلک مرض کے تعیں غیر سنجیدہ رویہ اپنا رہے ہیں جسے دیکھتے ہوئے انتظامیہ نے سخت قدم اٹھاتے ہوئے ہندپیڑھی کے تمام10 شاہراہوں کو پوری طرح لاک کر دیا ہے جبکہ علاقہ کے لوگوں تک رسد ۔ دوا و دیگر سہولیات فراہمی کے لئے رضاکاروں کی خدمات حاصل کی جارہی ہے۔


انجمن اسلامیہ کے جنرل سیکریٹر ی مختار احمد کا بھی ماننا ہے کہ ملیشیائی خاتون کی وجہ سے ہندپیڑھی میں کورونا پازیٹیو مریض کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔ تاہم اس معاملہ کے انکشاف ہونے کے بعد ہندپیڑھی کے علاقے میں دو بار 72 ۔ 72 گھنٹے کا کمپلیٹ لاک ڈاؤن لگایا گیا ۔ لیکن کورونا پازیٹیو مریض کی تعداد میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے اس علاقہ کو ہاٹ اسپاٹ قرار دیا گیا ہے۔ وہیں کورونا کے معاملے منظر عام پر آنے کے بعد علاقے کے لوگوں نے ہندپیڑھی کو ایک سازش کے تحت بدنام کرنے کا الزام لگایا ہے ۔وہیں میونسپل کارپوریشن کے صفائی ملازمین نے علاقہ کے لوگوں کے ذریعہ تھوکنے جبکہ میڈیکل کی ٹیم نے بدسلوکی کا الزام لگایا ہے۔ ان تمام معاملات کے باوجود علاقے میں سینٹایزیشن اور پولیس پیٹرولنگ اور ڈرن کیمروں سے نگرانی گیے جانے سمیت علاقے کے لوگوں کو سہولتیں فراہم کرنے کا عمل جاری ہے ۔

First published: Apr 17, 2020 06:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading