ہوم » نیوز » وطن نامہ

کوروناوائرس سے متاثر پرانے مریضوں کو Covid-19 کے خلاف لڑنے میں ملتی ہے مدد: سائندانوں کا دعویٰ

نئے کوروناوائرس یا پھر Covid-19 کو لیکر دنیا بھر میں سائنسداں مسلسل تحقیق کررہے ہیں۔ سنگا پور کے کچھ سائنسدانوں کی ٹیم نے دعویٰ کیا ہے کہ اگر کوئی پہلے کوروناوائرس کا شکار ہوا ہے تو اس کی امیونٹی(immunity) کووڈ Covid-19 کے خلاف لڑنے میں مدد کرتی ہے۔

  • Share this:
کوروناوائرس سے متاثر پرانے مریضوں کو Covid-19 کے خلاف لڑنے میں ملتی ہے مدد: سائندانوں کا دعویٰ
نئے کوروناوائرس یا پھر Covid-19 کو لیکر دنیا بھر میں سائنسداں مسلسل تحقیق کررہے ہیں۔

نئے کوروناوائرس یا پھر Covid-19 کو لیکر دنیا بھر میں سائنسداں مسلسل تحقیق کررہے ہیں۔ سنگا پور کے کچھ سائنسدانوں کی ٹیم نے دعویٰ کیا ہے کہ اگر کوئی پہلے کوروناوائرس کا شکار ہوا ہے تو اس کی امیونٹی(immunity) کووڈ Covid-19 کے خلاف لڑنے میں مدد کرتی ہے۔ تحقیق میں اور کیا کچھ کہا گیا ہے یہ ہم آپ کو بتائیں گے لیکن اس سے پہلے آپ کے من میں سوال اٹھ رہے ہوں گے کہ آخر یہ نیا اور پرانا کوروناوائرس (Coronavirus) کیا ہے؟

نیا کوروناوائرس(Coronavirus) ۔۔

عام بول چال کی زبان میں کہے تو کوروناوائرس(CoV) وائرس کا ایک بڑا کنبہ ہے۔ اس وائرس سے نارمل سردی اور بخار سے لیکر سانس کی جیسی خطرناک بیماری ہوتی ہے۔ آپ کو یاد ہوگا سال 2002 میں چین میں سارس کی وجہ سے وبا پھیلی تھی۔ یہ ( SARS) بھی کوروناوائرس کنبے سے تعلق رکھنے والا وائرس ہے۔ سارس (SARS-CoV) کا مطلب ہے سیویئر ایکیوٹ ریسپریٹری سنڈروم یعنی ایسی بیماری جو سانس کی تکلیف کی وجہ بنتی ہے۔ نئے کوروناوائرس جس سے پوری دنیا تباہ ہے اسے Sars-CoV-2 کا نام دیا گیا ہے۔

تحقیق میں کیا پتہ چلا۔۔

اب تحقیق پر لوٹتے ہیں۔ سائنسدانوں نے کہا ہے کہ ان افراد میں استثنیٰ بڑھتا ہے جو پہلے کورونا یا سارس وائرس کا شکار ہوچکے ہیں۔ یعنی ایسے لوگوں میں کورونا سے لڑنے کی صلاحیت بڑھ جاتی ہے۔ سائنس دانوں کے مطابق ایسے لوگوں میں ٹی سیلس (T-cells) کی ترقی ہوتی ہے۔ چائے کے ٹی سیلز (T-cells) عام طور پر وہائٹ بلڈ سیلس ہیں۔ یہ انفیکشن کی نشاندہی کرتا ہے اور وائرس کو پہلے ہی مار ڈالتا ہے۔ سنگاپور میں ڈیوک-نس میڈیکل اسکول میں متعدی بیماریوں کے پروفیسر ڈاکٹر انتونیو کے مطابق ، ٹی سیلز (T-cells) پہلے ہی 50 فیصد مریضوں میں ترقی کر چکے ہیں۔


نیا کوروناوائرس بیحد خطرناک
آپ کو بتادیں کہ نیا کوروناوائرس بیحد ہی خطرناک ہے، کئی مرتبہ دیکھا گیا ہے کہ مریض اس وائرس سے دو مرتبہ متاثر ہو گئے ہیں۔ عام طور پر کسی وائرس کا شکار ہونے پر لوگوں میں اس کی امیونٹی لمبے وقت تک بنی رہتی ہے لیکن نئے کوروناوائرس میں یہ دیکھا گیا ہے کہ کئی  مرتبہ 2-3 مہینے میں ہی مریضوں کی امیوںٹی ختم ہوجاتی ہے۔ ان میں دوبارہ کوروناوائرس یونے کا خطرہ بنا رہتا ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 19, 2020 07:58 AM IST