ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کیاتلنگانہ میں 9 جون کے بعدختم ہوسکتاہے لاک ڈاؤن؟نائٹ کرفیورہے گا جاری؟ جانئے تفصیلات

اسٹیٹ ہیلتھ ڈائریکٹر سرینواس راؤ (State Health Director Srinivas Rao ) نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کووڈ۔19 کے کیسوں اور اموات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ’’اگر کورونا کیسوں میں مزید کمی واقع ہوتی ہے تو حکومت لاک ڈاؤن کو ختم کرنے پر غور کر سکتی ہے‘‘۔

  • Share this:
کیاتلنگانہ میں 9 جون کے بعدختم ہوسکتاہے لاک ڈاؤن؟نائٹ کرفیورہے گا جاری؟ جانئے تفصیلات
تلنگانہ میں 9 جون کے بعد ختم ہوسکتاہے لاک ڈاؤن

تلنگانہ میں گزشتہ اپریل کے مقابلہ مئی کا تقابل کیاجائے تو کورونا کے معاملوں میں کمی دیکھی جارہی ہے۔حکام کا کہناہے کہ اگر مسلسل کورونا مثبت کسیوں میں کمی ریکارڈ کی گئی تو اس بات کا قوی امکان ہے کہ تلنگانہ حکومت عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کے کیسوں میں کمی کا رجحان ظاہر کرنے کے بعد 9 جون 2021 کے بعد لاک ڈاؤن کو ختم کرسکتی ہے۔ جو کہ جو 12 مئی 2021 سے جاری ہے۔


اسٹیٹ ہیلتھ ڈائریکٹر سرینواس راؤ (State Health Director Srinivas Rao ) نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کووڈ۔19 کے کیسوں اور اموات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ’’اگر کورونا کیسوں میں مزید کمی واقع ہوتی ہے تو حکومت لاک ڈاؤن کو ختم کرنے پر غور کر سکتی ہے‘‘۔


انہوں نے مزید کہا کہ ’’ہم ابھی کورونا کیسوں کی مثبت شرح میں کمی دیکھ رہے ہیں جو کہ صرف دو فیصد ہے۔ وہ اس لیے کہ حکومت نے وائرس کی منتقلی کو روکنے کے لیے سخت اقدامات اٹھائے ہیں‘‘۔راؤ نے بتایا کہ ’’پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران تلنگانہ میں 2261 تازہ کیس رپورٹ ہوئے، جبکہ 3043 افراد صحت یاب ہوئے ہیں اور ہلاکتوں کی تعداد 15 ہیں۔حکومت نے پہلے لاک ڈاؤن کو 12 مئی سے 10 دن کی مدت کے لئے نافذ کیا تھا ، اس کے بعد اس کی توسیع 28 مئی تک اور مزید 9 جون تک کردی گئی۔




  • ریاست میں ویکسی نیشن مہم:


راؤ نے مزید کہا کہ تلنگانہ میں اس وقت 9 لاکھ ویکسین کی خوراکیں ہیں اور وہ بیرون ملک پڑھنے والے طلبہ کو بیرون ملک سفر اور تعلیم حاصل کرنے کے لیے ویکسین فراہم کررہی ہے‘‘۔صحت کے ڈائریکٹر نے یہ بھی کہا کہ حکومت کووڈ۔19 سے متعلق کیسوں پر 114 ہسپتالوں کے خلاف موصولہ 185 شکایات پر کارروائی کررہی ہے، جن میں حیدرآباد کے 72، رنگا ریڈی میں 37 اور مڈچل اضلاع کے 48 ہسپتال شامل ہیں۔ راؤ نے یہ بھی بتایا کہ انفیکشن کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے دیہات میں مزید قرنطینہ مراکز کھول دیئے گئے ہیں۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jun 04, 2021 10:28 AM IST