ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بلیک فنگس کی دستک سے مدھیہ پردیش حکومت کی اڑی نیند، ماہرین کی کمیٹی دی تشکیل

مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ بلیک فنگس یعنی میوکورمائیکوسس بیماری کی دستک نے شیوراج سنگھ حکومت کی نیند اڑا دی ہے ۔

  • Share this:
بلیک فنگس کی دستک سے مدھیہ پردیش حکومت کی اڑی نیند، ماہرین کی کمیٹی دی تشکیل
مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ بلیک فنگس یعنی میوکورمائیکوسس بیماری کی دستک نے شیوراج سنگھ حکومت کی نیند اڑا دی ہے ۔

مدھیہ پردیش میں کورونا کے بڑھتے قہر کے بیچ بلیک فنگس یعنی میوکورمائیکوسس بیماری کی دستک نے شیوراج سنگھ حکومت کی نیند اڑا دی ہے ۔ راجدھانی بھوپال سمیت ریاست کے مختلف اضلاع کے اسپتالوں میں بلیک فنگس کے مریضوں کی نشاندہی ہونے کے بعد وزیر اعلی نے اس کی تشخیص کو لیکر ماہرین کی کمیٹی تشکیل دیدی ہے ۔

بلیک فنگس کووڈ ۱۹ کے مریضوں میں سائیڈایفکٹ کے طور پر سامنے آیا ہے ۔ دیڑھ ماہ قبل اس کی نشاندہی بی ایم سی کے سائن میں واقع بڑے اسپتال میں اس کی تیس مریضوں کی نشاندہی ہوئی تھی ۔بیماری کے سبب چھ مریضوں کی موت ہوئی تھی جب کہ گیارہ مریضوں کی آنکھ نکال کر ان کا علاج کیاگیاتھا۔ راجدھانی بھوپال کے مختلف اسپتالوں میں آج ایک دن میں بلیک فنگس کے ایک ساتھ  سات مریضوں کے سامنےآنے کے بعد نہ صرف محکمہ صحت بلکہ پوری حکومت کی نیند اڑگئی ہے ۔ راجدھانی بھوپال کے حمیدیہ اسپتال میں بلیک فنگس کے مریضوں کے علاج کے جہاں محکمہ صحت نے بیس بیڈکا ایک علیحدہ وارڈبنانے کی تیاری شروع کردی ہے وہیں وزیر اعلی نے پانچ ماہرین پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دیکر اس کے سبھی پہلوؤں پر رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت دی ہے ۔


واضح رہے کہ بلیک فنگس نامی بیماری ناک سے شروع ہوتی ہے اور آنکھ سے ہوتی ہوئی دماغ تک میں پھیل جاتی ہے ۔بلیک فنگس بیماری انسان کی بینائی چھین لتی ہے ۔

وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ  بلیک فنگس نام کی بیماری کچھ لوگوں کو سائیڈ ایفکٹ کے طور پر ہو رہی ہے ۔ اس کے علاج اور دوسرے طبی پہلوؤں پر نظر رکھنے کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے تاکہ کمیٹی کے مشورے پر بلیک فنگس کے مریضوں کا بہتر علاج کیا جا سکے اور کورونا کی وبائی بیماری کے ساتھ اس کا بھی خاتمہ کیا جا سکے ۔

Published by: Sana Naeem
First published: May 11, 2021 02:39 PM IST