உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی میں کورونا وائرس کی علامات والوں کا گھر میں قرنطینہ کر کے علاج ہو گا: ستیندر جین

    دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین

    دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین

    جین نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ نئے پروٹوکول کے مطابق جن لوگوں میں کورونا وائرس کی علامات یا ہونے کے معمولی علامات ہیں انہیں 14 دن تک ان کے گھر میں قرنطینہ کرکے وہیں علاج کیا جائے گا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے بدھ کو کہا کہ جن لوگوں میں کورونا وائرس کی علامات یا ہونے کے معمولی علامات ہیں انہیں 14 دن تک ان کے گھر میں قرطینہ کرکے وہیں علاج کیا جائے گا۔ جین نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ نئے پروٹوکول کے مطابق جن لوگوں میں کورونا وائرس کی علامات یا ہونے کے معمولی علامات ہیں انہیں 14 دن تک ان کے گھر میں قرنطینہ کرکے وہیں علاج کیا جائے گا۔ ایسے مریضوں کو اسپتال میں بھرتی کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔

      وزیر صحت نے راجدھانی دہلی میں كووڈ -19 کے سلسلے میں کہا کہ یہاں مثبت کیسز کی مجموعی تعداد 3314 ہے جس میں منگل کے 206 مریض بھی شامل ہیں۔ منگل کو 201 افراد اس انفیکشن سے ٹھیک ہوئے ہیں اور دہلی میں اب تک کل 1078 افراد ٹھیک ہو چکے ہیں۔ دہلی میں کورونا وائرس سے 54 ہلاکتیں ہوئی ہیں اور راحت کی بات یہ ہے کہ گزشتہ تین دن سے کسی کی موت نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال 53 متاثرین کو انتہائی نگہداشت یونٹ میں اور 12 کو وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے۔


      ایشیا کی سب سے بڑی سبزی اور پھل منڈی آزاد پور میں کورونا وائرس کے کیسز پر جین نے کہا کہ منڈی کو مناسب طریقے سے وائرس سے پاک کیا جا رہا ہے۔ منڈی میں جہاں کیسز سامنے آئے ہیں اس کے ارد گرد کی تمام دکانوں کو سیل کر دیا گیا ہے اور تمام احتیاطی قدم اٹھائے جا رہے ہیں۔ منڈی سے منسلک 11 افراد کے آج ہی کورونا وائرس پازیٹو کی رپورٹ آئی ہے۔

      جین نے کورونا وائرس مریضوں پر پلازمہ تھراپی کے استعمال پر کہا کہ یہ انتہائی تکنیکی ہے اور اس وقت یہ تجرباتی طورپر ہی استعمال میں ہے، جنہیں اس کی اجازت نہیں ہے استعمال نہیں کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی کو اس تھریپی کا استعمال کرنے کی اجازت ہے۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: