உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    WHO کا ALERT- ڈیلٹا اور اومیکرون ڈبل خطرناک، لا سکتے ہیں کورونا سونامی

    WHO का ALERT- ڈیلٹا اور اومیکرون دوگنا خطرناک، لا سکتے ہیں کورونا سونامی

    WHO का ALERT- ڈیلٹا اور اومیکرون دوگنا خطرناک، لا سکتے ہیں کورونا سونامی

    ڈبلیو ایچ او سربراہ نے اومیکرون ویرینٹ پر تشویش ظاہر کی۔ انہوں نے کہا کہ اومیکرون بہت تیزی سے پھیل رہا ہے۔ وہیں ڈیلٹا کے کیسیز بھی بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈیلٹا اور اومیکرون جڑواں خطرے ہیں جن کی وجہ سے ریکارڈ سطح پر لوگ بیمار پڑ رہے ہیں اور اسپتالوں میں بھرتی ہورہے ہیں۔ ان میں سے کچھ لوگوں کی موت ہورہی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی:کورونا وائرس انفیکشن تیزی سے بڑھ رہے کیسیز کے درمیان عالمی ادارہ صحت (WHO) نے وارننگ دی ہے کہ کورونا وائرس کے ڈیلٹا (DELTA) اور اومیکرون (Omicron) ویرینٹ کا ڈبل خطرہ سامنے بنا ہوا ہے۔ ایسا ممکن ہے کہ ان دونوں ویرینٹ سے انفیکشن کے کیسیز تیزی سے بڑھ جائیں کیونکہ یہ پچھلے انفیکشن یا موجودہ ویکسین کے باوجود کسی کو بھی متاثر کرسکتے ہیں۔ ایسا ممکن ہے کہ ان ویرینٹ میں موجودہ ویکسین کے خلاف اینٹی باڈی پیدا ہوجائے۔

      ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس ادنوم گیبرئیس (Tedros Adhanom Ghebreyesus) نے کہا کہ ہماری کوشش ہونی چاہیے کہ ہم صحت کی عدم مساوات کو ختم کریں۔ یہ وبا کو ختم کرنے کے لئے بھی اہم ہے۔ انہوں نے حکومتوں سے اگلے سال جولائی تک ہر ملک میں 70 فیصد covid-19 ویکسین کووریج یقینی کرنے کی درخواست کی۔ ڈبلیو ایچ او کے سربراہ نے کہا کہ یہ مسئلہ قلیل مدتی قوم پرستی سے اوپر اٹھنے کا۔ یہ آبادی اور معیشتوں کو مستقبل کے ویرینٹس سے بچانے کا وقت ہے۔

      ٹیڈروس نے تسلیم کیا تھاکہ ویکسین رول آوٹ میں رکاوٹ کے پیچھے دنیا بھر میں سپلائی چین میں رکاوٹ تھی۔ جب کہ اقوام متحدہ کی ہیلتھ آرگنائزیشن کے 92 رکن ممالک 40 فیصد ویکسینیشن ٹارگیٹ کو پورا کرنے سے چوک گئے تھے۔ ٹیڈروس نے کہا کہ ہیلتھ سسٹم پر دباو نہ صرف نئے covid19 مریضوں کو اسپتال میں بھرتی ہونے کی وجہ بنے گا بلکہ بڑی تعداد میں خود ہیلتھ ورکرس بھی بیمار ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ بنا ویکسین لئے ہوئے ہیں، اُن کے مرنے کا خطرہ کئی گنا زیادہ ہے۔

      ڈبلیو ایچ او سربراہ نے اومیکرون ویرینٹ پر تشویش ظاہر کی۔ انہوں نے کہا کہ اومیکرون بہت تیزی سے پھیل رہا ہے۔ وہیں ڈیلٹا کے کیسیز بھی بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈیلٹا اور اومیکرون جڑواں خطرے ہیں جن کی وجہ سے ریکارڈ سطح پر لوگ بیمار پڑ رہے ہیں اور اسپتالوں میں بھرتی ہورہے ہیں۔ ان میں سے کچھ لوگوں کی موت ہورہی ہے۔ وہیں انہوں نے کہا کہ لوگوں کو غلط معلومات سے بھی بچنا چاہیے۔ افواہ اور غلط جانکاری کی وجہ سے لوگوں کو ویکسین لگوانے میں ہچکچاہٹ ہوئی۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: