ہوم » نیوز » عالمی منظر

کورونا ختم ہونے کو لے کر عالمی صحت تنظیم کے سربراہ نے پہلی بار ٹائم لمٹ پر بات کی

ٹیڈروس نے جمعہ کو کہا کہ تقریبا 102 سال پہلے اسپینش فلو دو برسوں میں ختم ہوا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اگر دنیا متحد رہی اور ویکسین کی دریافت ہوئی تو یہ وبا دو سال سے کم وقت میں ختم ہو جائے گا۔

  • Share this:
کورونا ختم ہونے کو لے کر عالمی صحت تنظیم کے سربراہ نے پہلی بار ٹائم لمٹ پر بات کی
علامتی تصویر

جنیوا۔ عالمی صحت تنظیم  (WHO) کے سربراہ ٹیڈروس ادھانوم گیبرئیسیس (Tedros Adhanom Ghebreyesus) کا کہنا ہے کہ دنیا میں دو سال کے اندر کورونا وائرس وبا (Coronavirus Pandemic) ختم ہو جائے گا۔ اس کا خاتمہ سال 1918 میں ہوئے فلو وبا کو روک پانے میں لگے وقت سے کم وقت میں ہو جائے گا۔ ٹیڈروس نے جمعہ کو کہا کہ تقریبا 102 سال پہلے اسپینش فلو دو برسوں میں ختم ہوا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اگر دنیا متحد رہی اور ویکسین کی دریافت ہوئی تو یہ وبا دو سال سے کم وقت میں ختم ہو جائے گا۔ ٹیڈروس نے کہا کہ ایک صدی میں ایک بار ایسا صحت کا بحران آتا ہے۔ غور طلب ہے کہ اسپینش فلو کے پیش نظر فروری 1918 سے اپریل 1920 یعنی دو سال سے زیادہ وقت میں دنیا بھر میں تقریبا دو کروڑ لوگوں کی موت ہوئی تھی۔


گلوبلائزیشن کے پیش نظر تیزی سے پھیلا کورونا وائرس


ڈبلیو ایچ او چیف نے کہا کہ گلوبلائزیشن کے مدنظر کورونا وائرس کا پھیلاو سال 1918 کے مقابلے میں بہت تیزی سے ہوا ہے۔ حالانکہ، آج ہمارے پاس اس وقت کے مقابلے میں وائرس کو روکنے کے لئے تکنیک ہے۔ وائرس کو روک پانے کی تکنیک ایک صدی پہلے آج جیسی نہیں تھی۔


ڈبلیو ایچ او چیف نے کہا کہ آج کی دنیا میں ایک دوسرے کے رابطے میں آنے کا امکان اس وقت کی دنیا کے مقابلے کافی زیادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلوبلائزیشن کے پیش نظر کورونا وائرس دنیا مین بجلی کی رفتار سے پھیلتا جا رہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اسے روکنے کے لئے اب ہمارے پاس تکنیک اور علم بھی ہے۔ کورونا وائرس سے اب تک 22.81 کروڑ متاثر ہو چکے ہیں۔ کل 793,382 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ خیال رہے کہ کورونا وائرس سے متاثر ہونے اور اموات کے معاملہ میں امریکہ دنیا بھر میں سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے۔

 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 22, 2020 11:23 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading