ہوم » نیوز » عالمی منظر

عالمی صحت تنظیم کی وارننگ۔ تیار رہئے، ہو سکتا ہے کورونا انفیکشن کبھی ختم ہی نہ ہو

عالمی صحت تنظیم نے واضح کیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ کووڈ۔ انیس کبھی ختم ہی نہ ہو اور دنیا کو اس کے ساتھ ہی جینے کی عادت ڈالنی پڑے۔

  • Share this:
عالمی صحت تنظیم کی وارننگ۔ تیار رہئے، ہو سکتا ہے کورونا انفیکشن کبھی ختم ہی نہ ہو
عالمی صحت تنظیم کی وارننگ۔ تیار رہئے، ہو سکتا ہے کورونا انفیکشن کبھی ختم ہی نہ ہو

جنیوا۔ دنیا کو کچھ ہی مہینوں میں کورونا وائرس (Coronavirus Vaccine) کا ٹیکہ دستیاب کرانے کے اعلان کے بعد اب عالمی صحت تنظیم (WHO)  نے دنیا بھر کے ملکوں کے لئے انتباہ جاری کیا ہے کہ انہیں ایسے حالات کے لئے بھی تیار رہنا چاہئے جس میں یہ انفیکشن کبھی ختم ہی نہ ہو۔ عالمی صحت تنظیم نے واضح کیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ کووڈ۔ انیس (Covid-19) کبھی ختم ہی نہ ہو اور دنیا کو اس کے ساتھ ہی جینے کی عادت ڈالنی پڑے۔


ڈبلیو ایچ او کے ہنگامی معاملوں کے ڈائریکٹر مائیکل ریان نے جنیوا میں ایک ورچوئل پریس کانفرنس میں بدھ کو کہا کہ ’کورونا ہمارے درمیان اس طرح کے ایک وائرس میں تبدیل ہو سکتا ہے جو دوسروں سے ہٹ کر ہو اور ممکن ہے کہ یہ کبھی ختم ہی نہ ہو‘۔ انہوں نے ایچ آئی وی کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ یہ وائرس بھی ختم نہیں ہوا ہے۔ مائیکل ریان کے مطابق، ٹیکے کے بغیر عام لوگوں کو اس بیماری کو لے کر امیونٹی کی مناسب سطح حاصل کرنے میں سالوں لگ سکتے ہیں۔



اس سے پہلے عالمی صحت تنظیم کے سربراہ ٹیڈراس ایڈہنام نے کہا تھا کہ ٹیکہ بنانے کا کام تیزی سے چل رہا ہے اور کم ازکم 100 ٹیکے بنانے کی کوششوں پر کام چل رہا ہے۔ ان میں سے سات سے آٹھ ایسی ہیں جو کہ منزل کے کافی قریب ہیں۔ بتا دیں کہ صرف ڈبلیو ایچ او ہی نہیں بلکہ دنیا بھر کے ماہرین اندیشہ ظاہر کر رہے ہیں کہ ایسا کوئی ٹیکہ کبھی تیار ہی نہیں ہو پائے گا۔ دنیا بھر کے ملکوں نے اپنے لاک ڈاون میں نرمی دینا شروع کر دیا ہے جس کے بعد ٹیڈراس نے متنبہ کیا ہے کہ اس سے انفیکشن کی رفتار بڑھ سکتی ہے۔
First published: May 14, 2020 09:12 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading