ہوم » نیوز » عالمی منظر

الرٹ: ڈبلیو ایچ او نے مانا۔ کورونا انفیکشن کے ہوا سے پھیلنے کے ہیں ثبوت

بتا دیں کہ 32 ملکوں کے 239 سائنسدانوں نے کورونا وبا کو لے کر ایک کھلا خط لکھا تھا جس میں ڈبلیو ایچ او پر بھی سوال اٹھائے گئے تھے۔

  • Share this:
الرٹ: ڈبلیو ایچ او نے مانا۔ کورونا انفیکشن کے ہوا سے پھیلنے کے ہیں ثبوت
الرٹ: ڈبلیو ایچ او نے مانا۔ کورونا انفیکشن کے ہوا سے پھیلنے کے ہیں ثبوت

واشنگٹن۔ عالمی صحت تنظیم (WHO) نے بالآخر منگل کو یہ تسلیم کر لیا کہ کورونا وائرس انفیکشن (Coronavirus) کے ’ ہوا سے پھیلنے‘ کے کچھ ثبوت ملے ہیں۔ ڈبلیو ایچ او نے کہا ہے کہ اس کا پورا اندیشہ ہے کہ انفیکشن ہوا کے ذریعہ (Airborne spread of COVID-19) پھیل رہا ہے، حالانکہ اس پر ابھی اور ڈیٹا اکھٹا ہونا باقی ہے۔ اس سے پہلے کئی ملکوں کے سائنسدانوں نے ڈبلیو ایچ او کو ایک کھلا خط لکھ کر اپیل کی تھی کہ وائرس ہوا سے پھیل رہا ہے اور اپنے رہنما ہدایات میں تبدیلی کرنی چاہئے۔


بتا دیں کہ 32 ملکوں کے 239 سائنسدانوں نے کورونا وبا کو لے کر ایک کھلا خط لکھا تھا جس میں ڈبلیو ایچ او پر بھی سوال اٹھائے گئے تھے۔ ان سائنسدانوں کا دعویٰ ہے کہ کورونا وائرس ہوا کے ذریعہ بھی پھیلتا ہے لیکن ڈبلیو ایچ او اسے لے کر سنجیدہ نہیں ہے اور تنظیم نے اپنے رہنما خطوط میں بھی اس پر چپی سادھی ہوئی ہے۔ ان سائنسدانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ چھینکنے کے بعد ہوا میں دور تک جانے والے بڑے ڈراپلیٹ یا چھوٹے ڈراپلیٹ ایک کمرے یا ایک متعینہ علاقے میں موجود لوگوں کو انفیکشن زدہ کرنے میں اہل ہوتے ہیں۔ بند جگہوں پر یہ کافی دیر تک ہوا میں موجود رہتے ہیں اور آس پاس موجود سبھی لوگوں کو انفیکشن میں مبتلا کر سکتے ہیں۔



اب کیا بولا ڈبلیو ایچ او؟
ایک بار پھر تنقید جھیلنے کے بعد ڈبلیو ایچ او کی بنیدتا آلیگرانجی نے منگل کو کہا ’’ عوامی جگہوں پر، خاص کر بھیڑ بھاڑ والی، کم ہوا والی اور بند جگہوں پر ہوا کے ذریعہ وائرس پھیلنے کے اندیشے سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔ حالانکہ ان ثبوتوں کو اکھٹا کرنے اور سمجھنے کی ضرورت ہے۔ ہم یہ کام جاری رکھیں گے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے ہوا کے ذریعہ پھیلنے کے ثبوت تو مل رہے ہیں لیکن ابھی یہ پختہ طور پر نہیں کہا جا سکتا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 08, 2020 07:58 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading