உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lockdown: چین کے ایک شہر میں صرف 3 کیسز سامنے آتے ہی مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان، پورا شہر میں چھایا سناٹا

    بیجنگ اگلے ماہ سرمائی اولمپکس کی میزبانی کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

    بیجنگ اگلے ماہ سرمائی اولمپکس کی میزبانی کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

    چین کے شہر ہینان (Yuzhou) میں تقریباً 1.17 ملین افراد کی آبادی والے صوبہ یوزو (Henan) نے اعلان کیا کہ اب تمام شہریوں کو وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لیے گھروں تک ہی محدود رہنا ہوگا۔ یہ اعلان گزشتہ چند دنوں میں تین کیسز کے سامنے آنے کے بعد کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      دنیا کے سب سے زیادہ آبادی والے ملک چین میں کورونا وائرس کے تین کیسز ریکارڈ کیے جانے کے بعد منگل کو وسطی چین کے ایک شہر میں مکمل طور پر لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے۔ جہاں 10 لاکھ سے زائد افراد آباد ہیں۔ اب ان کو اپنے گھروں تک ہی محدود کردیا گیا ہے۔ بیجنگ نے وائرس کے پہلی بار سامنے آنے کے بعد سے سخت سرحدی پابندیوں اور لاک ڈاؤن کے ساتھ ’صفر کووڈ۔19‘ پالیسی کی نقطہ نظر کو اپنایا ہے۔ یہ پالیسی سرمائی اولمپکس (Winter Olympics) سے صرف ایک ماہ قبل اپنائی گئی ہے۔

      چین کے شہر ہینان (Yuzhou) میں تقریباً 1.17 ملین افراد کی آبادی والے صوبہ یوزو (Henan) نے اعلان کیا کہ پیر کی رات سے تمام شہریوں کو وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لیے گھروں تک ہی محدود رہنا ہوگا۔ یہ اعلان گزشتہ چند دنوں میں تین کیسز کے سامنے آنے کے بعد کیا گیا ہے۔پیر کو پوسٹ کیے گئے ایک بیان کے مطابق وسطی علاقے کے لوگوں کو باہر نہیں جانا چاہیے کہا گیا ہے۔ جب کہ تمام کمیونٹیز کے لیے وبا کی روک تھام اور کنٹرول کے اقدامات پر سختی سے عمل درآمد کے تحت مزید رہنما ہدایات جاری کیے جائیں گے۔

      ہینان کے عہدے داروں نے پہلے ہی اعلان کیا تھا کہ بس اور ٹیکسی خدمات کو روک دیا جائے گا اور شاپنگ مالز، میوزیم اور سیاحتی مقامات کو بند کیا جائے گا۔ چین میں منگل کو مزید 175 نئے کووڈ۔19 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، جن میں صوبہ ہینان میں پانچ اور مشرقی شہر ننگبو میں گارمنٹس فیکٹری سے منسلک ایک الگ کلسٹر میں آٹھ مزید شامل ہیں۔ چین میں وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے میں ناکام سمجھے جانے والے مقامی حکام کو اکثر برطرف یا سزا دی جاتی ہے، جس سے صوبائی حکومتوں کی جانب سے سخت ردعمل کا سلسلہ شروع ہوتا ہے کیونکہ وہ کسی بھی معاملے کو جلد ختم کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

      ژیان نامی شمالی شہر میں کمیونسٹ پارٹی کے دو سینئر عہدیداروں کو وبا کو نہ روکنے اور کنٹرول نہ کرنے پر ان کے عہدوں سے ہٹا دیا گیا اور پچھلے مہینے چین کے تادیبی ادارے نے اعلان کیا کہ شہر میں کورونا پھیلاؤ کو روکنے میں ناکامی پر درجنوں اہلکاروں کو سزا دی گئی۔ یہ اضافہ اس وقت ہوا جب بیجنگ اگلے ماہ سرمائی اولمپکس کی میزبانی کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: