உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کوروناوائرس: WHO نے جاری کی رمضان کیلئے گائڈلائنس، بتایا یہ۔۔۔

    ڈبلیو ایچ او

    ڈبلیو ایچ او

    دنیا بھر میں جاری کوروناوائرس کے قہر کے درمیان عالمی ادارہ صحت (World Health Organization) نے 23 اپریل سے شروع ہورہے رمضان (Ramadan) کے مہنے کیلئے گائڈ لائنس (Guidelines) جاری کی ہیں۔ کووڈ۔19 وبا (COVID-19 Pandemic) کے مد نظر ڈبلیو ایچ او (WHO) نے کئی ممالک میں (Social Distancing) سوشل ڈسٹینسنگ (سماجی دوری) کے سخت قانون پر عمل کرنے کی صلاح دی ہے۔

    • Share this:
      دنیا بھر میں جاری کوروناوائرس کے قہر کے درمیان عالمی ادارہ صحت  (World Health Organization) نے 23 اپریل سے شروع ہورہے رمضان  (Ramadan) کے مہنے  کیلئے گائڈ لائنس (Guidelines) جاری کی ہیں۔ کووڈ۔19 وبا (COVID-19 Pandemic) کے مد نظر ڈبلیو ایچ او (WHO) نے کئی ممالک میں  (Social Distancing) سوشل ڈسٹینسنگ (سماجی دوری) کے سخت قانون پر عمل کرنے کی صلاح دی ہے۔ ساتھ ہی کہا ہے کہ اس دوران بچاؤ کے قوانین پر عمل کیا جائے جس سے عوام کی صحت پر برا اثر نہ ہو۔ تنظیم نے کہا ہے کہ پوری دنیا میں اس بیماری سے دیڑھ لاکھ لوگوں کی موت ہچکی ہے۔ ایسے میں سبھی لوگ  (Social Distancing) سماجی دوری اور مذہبی پروگرام کا انعقاد نہ کریں۔

      گائیڈ لائنس میں کہا گیا ہے کی ایسے وقت میں معیاری بحران کے جائزہ کے بعد بھیڑ کو جمع کرنےوالے پروگراموں کو رد کر دینا چاہئے یا انہیں ملتوی کردینا چاہئے۔ ملک بھر میں صحت کے حکام کو اس وبا کے پھیلنے سے روکنے کیلئے خاص نقطہ نظر رکھنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔ ہدایات کے مطابق بھیڑ جٹانے والے پروگرام کی جگہ، ورجوئل متبادل جیسے، ریڈیو اور انٹرنیٹ کو اپنایا جاسکتا ہے۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس سلسلے میں مذہبی رہنماؤں کو جلد سے جلد فیصلہ کرنا ہوگا تاکہ وہ رمضان سے جڑے فیصلوں کو جلد سے جلد سبھی تک پہنچ سکیں۔

      عالمی ادارہ صحت(World Health Organization) کی جانب سے صالاح دی گئی ہے کہ جسمانی دوری پر عمل کرتے ہوئے ایک دوسرے سے ایک میٹر کی دوری پر رہنا چاہئے۔ تنظیم نے ہدایت دی ہے کہ جسمنانی رابچے سے بچنے کیلئے ایک دوسرے کو سلام کرنے یا مبارکباد دینے کیلئے دیگرطریقے اپنائے جائیں۔ جیسے ہاتھ ہوا میں لہرانا، سر جھکانا اور دل  پرہاتھ رکھنا، بیمار اور بزرگ لوگوں کو خاص طور پر اور احتیاط برتنا چاہئے۔ اور کسی بھی طرح کے پروگرام سے بچنا چاہئے

      ڈاکٹروں کی صلاح لیں ایسے لوگ۔۔۔
      ڈبلیو ایچ او  (WHO)  نے کہا کہ اس (Physical distancing) پر عمل کا خاص خیال اور اس کی پیروی کرتے ہوئے ضرورتمندوں کو زکوٰۃ یا عطیہ ، دیتے وقت بھی کیا جائے۔ بینکوئٹ میں افطار دینے کے بجائے پیکڈ فوڈ دیا جائے۔

      ڈبلیو ایچ او  (WHO)  نے بتایا کہ حٓلانکہ کووڈ۔19 کے دوران روزہ رکھنے کو لیکر کوئی تحقیق نہیں کی گئی ہے لیکن جو لوگ متاثر ہیں انہیں روزہ رکھنے اور توڑنے کیلئے ڈاکٹر سے صلاح ضرور لینی چاہئے۔۔۔
      Published by:sana Naeem
      First published: