உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Covid-19 vaccine: ناک سے لی جانے والی دنیا کی پہلی کووڈ-19 ویکسین تیار، چین میں ملی منظوری

    تصویر ٹوئٹر Ron

    تصویر ٹوئٹر Ron

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, Indiachinachina
    • Share this:
      چین کے شہر تیانجن میں قائم کمپنی کینسینا بائیولوجکس انکارپوریشن (CanSino Biologics Inc) کی جانب سے بنائی گئی کووِڈ 19 ویکسین کو دنیا کی ایسی پہلی ویکسین کا درجہ ملا ہے، جو کہ ناک سے لی جائے گی۔ اس کے لیے کسی بھی قسم کے انجکشن کی ضرورت نہیں ہے۔ اس اعلان کے ساتھ ہی کمپنی کے حصص کی قدر میں اضافہ ہوگیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہانگ کانگ میں کمپنی کے حصص میں 14.5 فیصد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

      کمپنی نے اتوار کو ہانگ کانگ اسٹاک ایکسچینج کو ایک بیان میں کہا کہ چین کی نیشنل میڈیکل پروڈکٹس ایڈمنسٹریشن کے سربراہ کین سینو نے کہا کہ کینسینا کی Ad5-nCoV کو بوسٹر ویکسین کے طور پر ہنگامی استعمال کے لیے منظوری دے دی ہے۔ یہ ویکسین کینسینا کی ون شاٹ کووڈ۔19 ویکسین کا نیا ورژن ہے، جسے مارچ 2020 میں انسانوں پر کیا گیا تھا۔ اس ویکسین کو فروری 2021 میں متعارف کروانے کے بعد چین، میکسیکو، پاکستان، ملائیشیا اور ہنگری میں استعمال کیا جا چکا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      ’’نصیر الدین شاہ، شبانہ اعظمی اور جاوید اختر ٹکڑے ٹکڑے گینگ کے سلیپر سیل کے ممبر‘‘ Narottam Mishra

      کین سینو نے کہا کہ ناک سے لی جانے والی ویکسین امیونٹی کو متحرک کر سکتی ہے اور انٹرا مسکیولر انجیکشن کے بغیر تحفظ کو بڑھانے کے لیے قوت مدافعت پیدا کر سکتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Pakistani Taliban: اسلام آبادکےساتھ پاکستانی طالبان نےجنگ ​​بندی کی ختم، معاہدےکی خلاف ورزی کالگایاالزام

      واضح رہے کہ چین میں سب سے بڑے ٹکنالوجی ہب شینزین (Shenzhen) کے زیادہ تر رہائشی ریاست گیر لاک ڈاؤن کی وجہ سے سخت پریشانیوں کا سامنا کررہے ہیں۔ کیونکہ 18 ملین آبادی والے شہر میں بڑے پیمانے پر کورونا وائرس (COVID-19) کے ضمن میں ٹسٹنگ جاری ہے اور لاک ڈاؤن قواعد پر عمل آواری کو یقینی بنانے کے لیے سخت اقدامات کیے جارہے ہیں۔ ان حالات میں اک سے لی جانے والی ویکسین کو امید کی نگاہوں سے دیکھا جارہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: