افغانستان نے رقم کی تاریخ، 140 سال قبل آسٹریلیا نےانجام دیا تھا یہ کارنامہ اب افغانستان نے دوہرایا

افغانستان کی جیت کے ہیرورہے کپتان راشد خان جنہوں نے میچ میں 11 وکٹ لئے۔

Sep 09, 2019 06:25 PM IST | Updated on: Sep 09, 2019 06:25 PM IST
افغانستان نے رقم کی تاریخ، 140 سال قبل آسٹریلیا نےانجام دیا تھا یہ کارنامہ اب افغانستان نے دوہرایا

راشد خان نے بنگلہ دیش کے خلاف اس ٹسٹ میچ میں 11 وکٹ حاصل کئے۔ فائل فوٹو

چٹگام میں کھیلےجارہے واحد ٹسٹ کے پانچویں دن افغانستان نے تاریخ رقم کردی۔ دوسری اننگ میں افغانستان نے بنگلہ دیش کو 173 رن پرسمیٹ کر224 رنوں سے جیت حاصل کرلی۔ افغانستان کی جیت کے ہیرو رہے کپتان راشد خان جنہوں نے میچ میں 11 وکٹ لئے۔ راشد خان نے پہلی اننگ میں 5 اوردوسری اننگ میں 6 وکٹ اپنے نام کئے۔ اس کے علاوہ انہوں نے پہلی اننگ میں 51 رنوں کی اننگ بھی کھیلی تھی۔

افغانستان نے اس ٹسٹ میچ میں پہلے بلے بازی کرتے ہوئے پہلی اننگ میں 342 رن بنائے۔ جواب میں بنگلہ دیش کی ٹیم پہلی اننگ میں محض 205 رنوں پرسمٹ گئی۔ اس کے بعد دوسری اننگ میں افغانستان نے 260 رن بناکربنگلہ دیش کو398 رنوں کا ہمالیائی ہدف دیا اورجواب میں میزبان ٹیم محض 173 رن پرسمٹ کرمیچ ہارگئی۔ واضح رہے کہ یہ افغانستان کی دوسری ٹسٹ جیت ہے، اس سے پہلے اس نےآئرلینڈ کوہرایا تھا۔

Loading...

افغانستان نے رقم کی تاریخ

واضح رہے کہ افغانستان نے محض تین ٹسٹ کھیلے ہیں اوراس نے دومیں جیت حاصل کی ہے۔ افغانستان یہ کارنامہ کرنے والی دوسری ٹیم ہے۔ ان سے پہلے آسٹریلیا نے یہ کارنامہ کیا تھا۔ انگلینڈ کو دوٹسٹ جیتنے میں چارمیچ لگے تھے، وہیں ہندوستان کو دو ٹسٹ جیتنے میں 30 ٹسٹ میچ لگے تھے۔

افغانستان کو پہلی ٹسٹ جیت آئرلینڈ کے خلاف ملی تھی۔ فائل فوٹو افغانستان کو پہلی ٹسٹ جیت آئرلینڈ کے خلاف ملی تھی۔ فائل فوٹو

راشد خان نے بنائے یہ ریکارڈ

اس ٹسٹ جیت کوجیتنے کےساتھ ہی راشد خان کے کپتان نے بھی تاریخ رقم کی۔ 20 سال کے راشد خان پہلی ٹسٹ جیت حاصل کرنے والے سب سے نوجوان کپتان بن گئے ہیں۔ ساتھ ہی وہ دنیا کے پہلے کپتان ہیں، جس نے اپنے ڈیبیوٹسٹ میں ایک نصف سنچری لگائی اور10 سے زیادہ وکٹ لئے۔ راشد خان کوان کی شاندارکارکردگی کے لئے 'مین آف دی میچ' منتخب کیا گیا۔ جیت کے بعد راشد خان نے کہا کہ 'ہم نے بنگلہ دیش جیسی مضبوط ٹیم کے خلاف جیت درج کی ہے۔ ہم ٹسٹ فارمیٹ میں نئے ہیں اورایسے میں جیت کا سہرا کوچنگ اسٹاف کوجاتا ہے۔ سبھی نے منصوبہ بند اورمنظم طریقے سے کام کیا۔ بلے بازوں نے پہلی اننگ میں اچھی بلے بازی کی اورنوجوانوں نے اچھی گیند بازی کی'۔ راشد خان نے اپنا 'مین آف دی میچ' ایوارڈ محمد نبی کو وقف کردیا جن کا یہ آخری ٹسٹ میچ تھا۔ محمد نبی نے ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لیاہے۔

Loading...