سری سنت کے ساتھ اسپاٹ فکسنگ میں پھنسےاس کرکٹرپراب لگا دھوکہ دہی کا الزام

سال 2013 میں اجیت چندیلا پرآئی پی ایل میں اسپاٹ فکسنگ میں شامل ہونے کا الزام لگا تھا۔ اس وقت چندیلا آئی پی ایل میں راجستھان رائلس کے لئے کھیلتے تھے۔

Sep 10, 2019 09:49 PM IST | Updated on: Sep 10, 2019 09:49 PM IST
سری سنت کے ساتھ اسپاٹ فکسنگ میں پھنسےاس کرکٹرپراب لگا دھوکہ دہی کا الزام

اسپاٹ فکسنگ میں پھنسےکرکٹرپراب دھوکہ دہی کا الزام

کرکٹراجیت چندیلا پرانڈر-14 ٹیم میں سلیکشن کےنام پرلاکھوں روپئے ٹھگنےکا الزام لگا ہے۔ اترپردیش کےہاپوڑکے ایک تاجرنے الزام لگایا ہے کہ ان کے بیٹے کوٹیم میں شامل کرنےکےلئےان سےساڑھے سات لاکھ روپئےلئےگئے۔ انہوں نے اجیت چندیلا کے خلاف ایف آئی آردرج کرائی ہے۔

کیا ہے پورا معاملہ؟

Loading...

الزام ہےکہ اجیت چندیلا نےمتاثرہ شخص کےبیٹےکا سلیکشن انڈر-14 ہندوستانی کرکٹ ٹیم میں کرانےکا وعدہ کیا تھا۔ چندیلا نےاس کےلئےساڑھےسات لاکھ روپئےکا مطالبہ کیا تھا۔ 24 دسمبر2018 میں اجیت چندیلا اس کےگھرپہنچا، جہاں متاثرہ شخص نےایک جاننے والےکےسامنے اجیت چندیلا کوساڑھے سات لاکھ روپئے دے دیئے۔ اس کے بعد چندیلا نے کہا کہ فروری 2019 میں ان کا سلیکشن ہوجائےگا۔ تاہم کئی ماہ کےانتظارکے بعد بھی متاثرہ شخص کے بیٹے کا سلیکشن نہیں ہوسکا۔ سلیکشن نہ ہونے پراس نےاپنے پیسے واپس مانگے۔ بعد میں مارچ 2019 میں اجیت چندیلا نےسات لاکھ کا چیک دے کردوماہ کے اندرپچاس ہزار روپئےنقد دینے کا وعدہ کیا، لیکن چیک کھاتے میں جمع کرنےکےبعد باؤنس ہوگیا۔ چندیلا کے خلاف ایف آئی آردرج کرکے معاملے کی جانچ شروع کردی گئی ہے۔

اسپاٹ فکسنگ کے ملزم

سال 2013 میں اجیت چندیلا پرآئی پی ایل میں اسپاٹ فکسنگ میں شامل ہونےکا الزام لگا تھا۔ اس وقت چندیلا آئی پی ایل میں راجستھان رائلس کےلئےکھیلتےتھے۔ دہلی پولیس نے16 مئی 2013 کوسری سنت اورانکت چوہان کےساتھ ساتھ چندیلا کواسپاٹ فکسنگ کےالزام میں گرفتارکیا تھا۔ بعد میں بی سی سی آئی نےان پرتاعمرپابندی لگا دی تھی۔ اس معاملے میں سری سنت کے خلاف عائد پابندی آئندہ سال اگست میں ختم ہوجائے گی۔

Loading...