اپنے دم پر انگلینڈ کو پہلی مرتبہ جتایا ورلڈ کپ ، پھر بھی زندگی بھر معافی مانگتا رہے گا یہ بڑا کھلاڑی ! ۔

آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں انگلینڈ کو چمپئن بنانے والے آل راونڈر بین اسٹوکس کافی افسردہ ہیں ۔

Jul 15, 2019 08:27 PM IST | Updated on: Jul 15, 2019 08:29 PM IST
اپنے دم پر انگلینڈ کو پہلی مرتبہ جتایا ورلڈ کپ ، پھر بھی زندگی بھر معافی مانگتا رہے گا یہ بڑا کھلاڑی ! ۔

آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں انگلینڈ کو چمپئن بنانے والے آل راونڈر بین اسٹوکس کافی افسردہ ہیں ۔ دراصل نیوزی لینڈ کے خلاف فائنل میچ میں ان سے ایک ایسی نادانستہ غلطی ہوئی ، جس کا انہیں زندگی بھر پچھتاوا رہے گا ۔ اس بات کا انکشاف خود بین اسٹوکس نے ورلڈ کپ جیتنے کے بعد کیا ۔

دراصل بین اسٹوکس جب آخری اوور میں رن دوڑ رہے تھے تو مارٹن گپٹل کا ایک تھرو ان کے بلے باز پر جا لگا اور گیند باونڈری لائن کے باہر چلی گئی ۔ اس وجہ سے امپائر نے انگلینڈ کو چھ رن دئے ، جس کے بعد انگلینڈ میچ ٹائی کرانے میں کامیاب رہا ۔ میچ ٹائی ہونے کے بعد سپراوور کھیلا گیا ، جس میں بھی نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کا میچ ٹائی پر ختم ہوا اور آخر میں زیادہ باونڈری لگانے کی وجہ سے انگلینڈ کو فاتح قرار دیا گیا ۔

Loading...

انگلینڈ شاید ہی وہ میچ ٹائی کراپاتا ، اگر بین اسٹوکس کے بلے پر گیند نہیں لگتی اور انگلینڈ کو چار اوور تھرو کے رن نہیں ملتے ۔ تاہم جب بین اسٹوکس سے اس بارے میں سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ میں نے کین ولیمسن سے کہا کہ میں زندگی بھر اس چیز کیلئے معافی مانگتا رہوں گا ۔

ban stokes

آپ کو بتادیں کہ جن اوور تھرو کے چار رنوں کی وجہ سے انگلینڈ ورلڈ کپ جیتا ، اس پر بھی تنازع کھڑا ہوگیا ہے ۔ پانچ مرتبہ بیسٹ امپائر رہ چکے سائمن ٹافل کے مطابق فائنل میں امپائر دھرم سینا سے بڑی غلطی ہوئی ۔ ایم سی سی کی قوانین بنانے والی ذیلی کمیٹی کے رکن ٹافل نے کہا کہ انگلینڈ کو پانچ رن کی جگہ چھ رن دینا صاف طور پر امپائروں کی غلطی تھی ۔ انگلینڈ کو چھ رن نہیں بلکہ پانچ رن ہی دئے جانے چاہئے تھے ۔

Loading...