ورلڈ کپ 2019 : اس وجہ سے پاکستان کے نئے وسیم اکرم نہیں بن پائے عماد وسیم

افغانستان کے خلاف میچ میں ٹیم کے سنکٹ موچک بنے عماد پاکستان کے نئے وسیم اکرم بننے کا خواب دیکھتے تھے ، لیکن ٹیم میں ان کی انٹری کسی اور شکل میں ہوئی ۔

Jun 30, 2019 12:57 PM IST | Updated on: Jun 30, 2019 12:57 PM IST
ورلڈ کپ 2019 : اس وجہ سے پاکستان کے نئے وسیم اکرم نہیں بن پائے عماد وسیم

ورلڈ کپ 2019 : اس وجہ سے پاکستان کے نئے وسیم اکرم نہیں بن پائے عماد وسیم

پاکستان کیلئے اس ورلڈ کپ میں اپنی امیدوں کو زندہ رکھنے کیلئے باقی بچے دونوں میچ جیتنے ضروری تھے ، لیکن گزشتہ روز افغانستان کے خلاف ہی پاکستانی ٹیم پر ٹورنامنٹ سے باہر ہونے کا خطرہ منڈلانے لگا تھا ۔ ایک وقت ایسا تھا کہ پاکستان کے ہاتھ سے مقابلہ تقریبا نکل گیا تھا ، لیکن ایسے میں آل راونڈر عماد وسیم نے ناٹ آوٹ 49 رنوں کی اننگز کھیل کر ٹیم کو نہ صرف جیت دلائی ، بلکہ ناک آوٹ راونڈ کیلئے بھی اپنی مضبوط دعویداری پیش کردی ۔

عماد وسیم نے اس وقت اننگز کو سنبھالا ، جب ٹیم کے اسٹار بلے باز ایک کے بعد ایک پویلین لوٹ گئے تھے ۔ ایسے وقت میں 30 سال کا یہ آل راونڈر ٹیم کو بحران سے باہر نکالنے کیلئے کھیونہار بنا ۔ بلے سے شاندار کارکردگی سے پہلے عماد نے گیند سے بھی کمال کیا اور دو وکٹ جھٹک کر افغانستان کو 227 رنوں پر روکنے میں اہم کردار ادا کیا ۔ حالانکہ ٹیم کے سنکٹ موچک بنے عماد پاکستان کے نئے وسیم اکرم بننے کا خواب دیکھتے تھے ، لیکن ٹیم میں ان کی انٹری کسی اور شکل میں ہوئی ۔

Loading...

اٹھارہ دسمبر 1988 کو برطانیہ کے ویلس میں پیدا ہوئے عماد وسیم نے 2015 میں پاکستان کی جانب سے بین الاقوامی کرکٹ میں قدم رکھا تھا ۔ ان کے والد برطانیہ میں انجینئر تھے ۔ مگر جب عماد کافی چھوٹے تھے ، تو ان کا کنبہ پاکستان آگیا ۔ یہاں عماد نے فرسٹ زمرہ کی کرکٹ کھیلی ۔ وہ پاکستان کی نمائندگی کرنے والے ویلس میں پیدا ہوئے پہلے کرکٹر بھی بنے ۔

عماد نے میڈیسن کی اپنی تعلیم شروع ہی کی تھی کہ پاکستانی انڈر 19 ٹیم میں سلیکشن ہوگیا اور پھر ان کا ارادہ بدل گیا اور یہیں سے ان کے کرکٹ کا سفر شروع ہوا ۔ عماد کو یقین تھا کہ وہ پاکستان کے لیجنڈ کرکٹر وسیم اکرم کی برابری کرسکتے ہیں ، لیکن ان کے پاس ٹیم میں بطور تیز گیند باز اپنی جگہ بنانے کیلئے مطلوبہ رفتار نہیں تھی ۔ اس کے بعد کوچ نے ان کے اسٹائل کو چائنامین کی طرح بدل کر ان کی مدد کی ۔

پاکستان کو بنایا ورلڈ کپ فاتح

عماد وسیم بلے بازی بھی کافی اچھی کرسکتے ہیں اور ان کی اس قابلیت نے 2019 ورلڈ کپ میں نہ صرف پاکستان کی امیدوں کو زندہ رکھا ہے بلکہ 2006 میں پاکستان کو انڈر 19 ورلڈ کپ کا چمپئن بھی بنایا تھا ۔

Loading...