پاکستان کے خلاف سیریز کے بعد انگلینڈ نے ورلڈ کپ کیلئے اپنی ٹیم میں کی بڑی تبدیلی ، اس طوفانی گیند باز کو ملی جگہ

آل راؤنڈر جوزف آرچر اور لیام ڈاؤسن کو انگلینڈ کے طویل الانتظار ورلڈ کپ کی ٹیم میں جگہ دی گئی ہے، آئی سی سی ٹورنامنٹ کے میزبان ملک نے منگل کو اپنی 15 رکنی ٹیم کا اعلان کیا۔

May 21, 2019 10:35 PM IST | Updated on: May 21, 2019 10:50 PM IST
پاکستان کے خلاف سیریز کے بعد انگلینڈ نے ورلڈ کپ کیلئے اپنی ٹیم میں کی بڑی تبدیلی ، اس طوفانی گیند باز کو ملی جگہ

پاکستان کے خلاف سیریز کے بعد انگلینڈ نے ورلڈ کپ کیلئے اپنی ٹیم میں کی بڑی تبدیلی

آل راؤنڈر جوزف آرچر اور لیام ڈاؤسن کو انگلینڈ کے طویل الانتظار ورلڈ کپ کی ٹیم میں جگہ دی گئی ہے، آئی سی سی ٹورنامنٹ کے میزبان ملک نے منگل کو اپنی 15 رکنی ٹیم کا اعلان کیا۔  آرچر کو گزشتہ ماہ اعلان کردہ انگلینڈ کی ابتدائی 15 رکنی ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا تھا، ایسے میں ان کا انتخاب حیران کن رہا۔ 30 مئی سے ہونے والے آئی سی سی ورلڈ کپ کے میزبان انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے 23 مئی کی آخری تاریخ سے محض دو روز قبل ہی منگل کو اپنی آخری عالمی کپ ٹیم کا اعلان ہے۔

آرچر کو آئر لینڈ سیریز اور پاکستان کے خلاف ایک میچ كےليے ٹیم میں شامل کیا گیا تھا۔ آرچر کے علاوہ آل راؤنڈر لیام ڈاؤسن اور ٹاپ آرڈر کے بلے باز جیمز ونس کو بھی ٹیم میں جگہ ملی ہے جبکہ ڈیوڈ ولی، جو ڈینلے اور ایلیکس ہیلز جگہ بنانے سے محروم رہ گئے۔

Loading...

مارچ میں انگلینڈ کے لیے کیریئر کا آغاز کرنے کے بعد سے اب تک وہ صرف چار بین الاقوامی میچ کھیل چکے آرچر موجودہ ٹیم کے سب سے تیزی سے ابھرتے ہوئے باصلاحیت کھلاڑی مانے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے تجربہ کار ولی پر سلیکٹرز نے انہیں ترجیح دی ہے۔

تیز گیند باز ولی نے انگلینڈ کے لیے مسلسل اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے لیکن پاکستان کے خلاف سیریز میں ان کی کارکردگی ملی جلی رہی تھی جس سے وہ عالمی کپ ٹیم میں جگہ بنانے سے چوک گئے۔ دوسری طرف آرچر نے ون ڈے میں حیرت انگیز کھیل دکھاتے ہوئے دی اوول میں پہلے ون ڈے میں پاکستان کے خلاف چار اوور میں بہترین گیند بازی کی۔

ایشیز کے بعد اپنا عہدہ چھوڑنے والے انگلینڈ کے موجودہ کوچ ٹریور بیلس نے ٹیم انتخاب کے سلسلے میں کہاکہ ’’میں نے پہلے آرچر کو کھیلتے نہیں دیکھا تھا لیکن وہ امیدوں پر کھرے اترے ہیں۔ ان کے کھیل میں زبردست کنٹرول ہے اور وہ میچ کے تین مرحلوں میں بھی گیند بازی کر سکتے ہیں‘‘َ۔ انہوں نے کہاکہ ’’گزشتہ چھ ماہ کافی مصروف رہے ہیں، لیکن کھلاڑیوں نے کافی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور کسی بھی ٹیم کے لئے ناک آؤٹ کرکٹ سب سے زیادہ دباؤ والی ہوتی ہے۔ ہمارا پہلا ہدف تو سیمی فائنل میں کوالیفائی کرنا ہوگا، اس کے بعد تو کچھ بھی ہو سکتا ہے‘‘َ۔

چوٹ کی قیاس آرائیوں کے درمیان ڈاوسن نے بھی ٹیم میں جگہ بنا لی ہے۔ آل راؤنڈر نے گزشتہ سال اکتوبر کے بعد سے انگلینڈ کے لئے نہیں کھیلا ہے۔ انہیں سری لنکا کے دورے میں چوٹ لگی تھی، جس کے بعد ڈینلي کو ٹیم میں موقع دیا گیا تھا لیکن وہ آئر لینڈ اور پاکستان کے خلاف سیریز میں اچھی کارکردگی نہیں کر سکے۔ انہیں پاکستان کے خلاف تین میچوں میں ایک بھی وکٹ نہیں ملا اور یہی ان کے باہر ہونے کی وجہ رهی۔

انگلینڈ اسکواڈ : ایون مورگن (کپتان)، معین علی، جوزف آرچر، جانی بیرسٹو، جوس بٹلر (وکٹ کیپر)، ٹام کیرن، لیام ڈاوسن، لیام پلینكیٹ، عادل راشد، جو روٹ، جیسن رائے، بین اسٹوکس، جیمز ونس، کرس ووکس، مارک ووڈ۔

Loading...