شعیب اختر نے ہندوستان سے مانگی مدد ، کہا : پاکستان کو آپ کی سخت ضرورت

پاکستان کے سابق تیز گیند باز شعیب اختر نے آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں اپنی ٹیم کے سیمی فائنل میں جانے کیلئے ہندوستان سے مدد مانگی ہے ۔

Jun 30, 2019 09:21 AM IST | Updated on: Jun 30, 2019 09:21 AM IST
شعیب اختر نے ہندوستان سے مانگی مدد ، کہا : پاکستان کو آپ کی سخت ضرورت

شعیب اختر نے ہندوستان سے مانگی مدد

پاکستان کے سابق تیز گیند باز شعیب اختر نے آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں اپنی ٹیم کے سیمی فائنل میں جانے کیلئے ہندوستان سے مدد مانگی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انگلینڈ کو ہندوستان ہرا دے تو پاکستان آگے چلا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان سے اسی مدد کی درکار ہے ۔ اختر نے کہا کہ انہیں لگتا ہے کہ سیمی فائنل میں ہندوستان اور پاکستان کا مقابلہ ہوگا ۔ اگر ایسا ہوتا ہے تو میچ کافی زبردست ہوگا ۔

شعیب اختر نے اپنے یو ٹیوب چینل پر کہا کہ ہندوستان اس وقت نمبر ون بننے کیلئے کھیل رہا ہے اور وہ ٹاپ پر ہی ہوگا ۔ ایسے میں سیمی فائنل میں ہندوستان اور پاکستان کا میچ ہوسکتا ہے ، جو کافی دلچسپ ہوگا ۔ خیال رہے کہ چھ میچوں میں ہندوستان کے پاس 11 پوائنٹس ہیں اور وہ فی الحال دوسری پوزیشن پر ہے وہیں 8 میچوں میں پاکستان کے پاس 9 پوائنٹس ہیں ۔ پاکستان اسی صورت میں سیمی فائنل میں پہنچ سکتا ہے جب اتوار کو ہندوستان انگلینڈ کو ہرا دے اور پھر پاکستان اپنے اگلے اور لیگ کے آخری میچ میں بنگلہ دیش کو ہرا دے ۔

Loading...

خیال رہے کہ اس سے قبل شعیب اختر نے افغانستان پر شدید حملہ بولتے ہوئے کہا تھا کہ اگر افغانستان کی ٹیم کے سبھی کھلاڑیوں کے آئی ڈی کارڈ اچھی طرح چیک کئے جائیں تو ٹیم پر پابندی عائد ہوسکتی ہے ۔ انہوں نے یہ بیان افغانستان کرکٹ بورڈ کے سی ای او پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا تھا ۔

اختر کا کہنا تھا کہ اگر افغانستان کی ٹیم کے سبھی کھلاڑیوں کے آئی ڈی کارڈ نکلوا لئے جائیں تو اس ٹیم پر پابندی لگ سکتی ہے ۔ افغانستان کرکٹ بورڈ کے سی ای او سمیت ان لوگوں سے درخواست ہے جو میڈیا میں بیان دیتے ہیں کہ وہ ایسا نہ کریں ، ورنہ سارے کے سارے آپ کے رشتہ دار پیشاور اور کراچی کے نکل جائیں گے اور آپ کی ٹیم پر پابندی عائد ہوسکتی ہے۔

شعیب اخترنے مزید کہا کہ افغان ٹیم کا گھریلومیدان کبھی پیشاوراور راولپنڈی ہوتا تھا۔ ہم لوگ ان کے لڑکوں کوتیارکرتےتھے، لیکن آج وہ دہلی اورنوئیڈا چلےگئے ہیں۔ دہرہ دون ان کاہوم گراونڈ بن گیا ہے۔ ہندوستان نے ان پرکافی سرمایہ کاری کی ہے، لیکن وہ افغانستان ٹیم کوبلے بازی میں مضبوط نہیں کرپائے۔

Loading...