فلینڈر اور کیشو مہاراج نے کیا ٹیم انڈیا کی ناک میں دم ، ہندوستان کو 326 رنوں کی سبقت حاصل

آف اسپنر روی چندرن اشون نے ایک بار پھر شاندار بولنگ کرتے ہوئے چار وکٹ حاصل کئے جس کی بدولت ہندستان نے جنوبی افریقہ کو دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو پہلی اننگز میں 275 رنز پر سمیٹ کر 326 رنز کی بڑی برتری حاصل کر لی۔

Oct 12, 2019 06:19 PM IST | Updated on: Oct 12, 2019 06:23 PM IST
فلینڈر اور کیشو مہاراج نے کیا ٹیم انڈیا کی ناک میں دم ، ہندوستان کو 326 رنوں کی سبقت حاصل

فلینڈر اور کیشو مہاراج نے کیا ٹیم انڈیا کی ناک میں دم ، ہندوستان کو 326 رنوں کی سبقت حاصل

آف اسپنر روی چندرن اشون نے ایک بار پھر شاندار بولنگ کرتے ہوئے چار وکٹ حاصل کئے جس کی بدولت ہندستان نے جنوبی افریقہ کو دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو پہلی اننگز میں 275 رنز پر سمیٹ کر 326 رنز کی بڑی برتری حاصل کر لی۔ جنوبی افریقہ کی اننگز ختم ہوتے ہی تیسرے روز کا کھیل بھی ختم ہو گیا۔ اب یہ چوتھے دن کی صبح پتہ چلے گا کہ ہندستان جنوبی افریقہ سے فالو آن کراتا ہے یا نہیں۔ جنوبی افریقہ کے ٹاپ آرڈر نے پھر مایوس کیا جبکہ اس کے نچلے آرڈر نے جدوجہد کرنے کا حوصلہ دکھایا۔

دسویں نمبر کے بلے باز کیشو مہاراج نے اپنے کیریئر کی بہترین اننگز کھیلتے ہوئے 132 گیندوں میں 12 چوکوں کی مدد سے 72 رن بنائے جبکہ فاسٹ بولر ورنون فلینڈر نے 192 گیندوں کی میراتھن اننگز میں چھ چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 44 رنز بنائے۔ کیشو اور فلینڈر نے نویں وکٹ کے لئے 109 رن کی اہم شراکت کی اور مہمان ٹیم کی اننگز جلد سمیٹنے کے ہندوستان کے انتظار میں اضافہ کردیا ۔ اشون نے آخری دو وکٹ نکال کر جنوبی افریقہ کو 275 پر نمٹایا ۔ اشون نے 284 اوور میں 69 رن پر چار وکٹ لئے۔ اشون نے وشاکھاپٹنم میں پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں سات وکٹ لینے سمیت کل آٹھ وکٹ لئے تھے۔

Loading...

فاسٹ بولر امیش یادو نے 37 رن پر تین وکٹ ، محمد سمیع نے 44 رن پر دو وکٹ اور لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے 81 رن دے کر ایک وکٹ لیا۔ جنوبی افریقہ نے دن کی شروعات تین وکٹ پر 36 رن سے کی ۔ ہندستان کے ہمالیائی اسکور کے جواب میں جنوبی افریقہ نے کل خراب شروعات کی تھی۔ ہنوما وہاری کی جگہ ٹیم میں شامل کیے گئے فاسٹ بولر امیش یادو نے اپنے انتخاب کو درست ثابت کرتے ہوئے دوسرے ہی اوور میں ایڈرن ماركرم کو ایل بی ڈبلیو کر دیا تھا۔ ماركرم کا اکاؤنٹ بھی نہیں کھلا۔ یادو نے پھر اپنے دوسرے اوور میں پہلے ٹیسٹ کے سنچری میکر ڈین ایلگر کو بولڈ کر دیا تھا۔ ایلگر چھ رن ہی بنا سکے۔

پہلی ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں پانچ وکٹ لینے والے محمد سمیع نے تمبا باوما کو وکٹ کیپر ردھمان ساہا کے ہاتھوں کیچ کرا دیا تھا۔ ایلگر نے چھ اور باوما نے آٹھ رن بنائے۔ تھيونس ڈی برون نے 20 اور اینرک نورتجے نے دو رنز سے اپنی اننگز کو آگے بڑھایا۔ ہندستان کو چوتھی کامیابی جلد ہی مل گئی جب سمیع نے نائیٹ واچ مین نورتجے کو ٹیم کے 41 کے اسکور پر آؤٹ کر دیا۔ نورتجے کا کیچ کپتان وراٹ کوہلی نے لپکا۔ نورتجے نے تین رن بنائے۔

ٹیم کے 53 کے اسکور پر برون کو یادو نے پویلین بھیج کر اپنا تیسرا وکٹ لیا۔ برون نے 58 گیندوں پر 30 رنز کی اننگز میں چھ چوکے لگائے۔ کپتان فاف ڈو پلیسس اور وکٹ کیپر كوئنٹن ڈی کوک نے چھٹے وکٹ کے لئے 75 رن جوڑ کر اننگز کو سنبھالنے کی کوشش کی ، لیکن اشون نے ڈی کوک کو بولڈ کر اس شراکت کو توڑ دیا۔ ڈی کوک نے 48 گیندوں پر سات چوکوں کی مدد سے 31 رن بنائے۔ جنوبی افریقہ کا چھٹا وکٹ 128 کے اسکور پر گرا۔ اس کے 11 رن بعد سیترن متھوسامي بھی پویلین لوٹ گئے۔ انہیں جڈیجہ نے ایل بی ڈبلیو کیا۔ متھوسامي نے 20 گیندوں میں سات رن بنائے۔ اشون نے جنوبی افریقہ کے کپتان ڈو پلیسس کی جدوجہد کو ختم کیا۔ ڈو پلیسس کا کیچ اجنکیا رہانے نے لپکا۔ ڈو پلیسس نے 117 گیندوں میں نو چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 64 رن بنائے۔

جنوبی افریقہ کا آٹھواں وکٹ 162 کے اسکور پر گرنے پر لگ رہا تھا کہ اس کی اننگز 200 رنز کے اندر سمٹ جائے گی لیکن 10 ویں نمبر کے بلے باز کیشو مہاراج نے کندھے میں درد ہونے کے باوجود اپنے کیریئر کی بہترین اننگز کھیلتے ہوئے 132 گیندوں میں 12 چوکوں کی مدد سے 72 رن بنائے۔ تیز گیند باز ورنون فلینڈر نے 192 گیندوں کی میراتھن اننگز میں چھ چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 44 رنز بنائے۔ کیشو اور فلینڈر نے نویں وکٹ کے لئے 109 رن کی اہم شراکت کی۔

Loading...