پاکستان میں آئی پی ایل نشریات پر پابندی ، عمران حکومت نے لگایا یہ سنگین الزام

پاکستان کابینہ نے دنیا بھر میں مشہور انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) ٹوئنٹی 20 ٹورنامنٹ کی پاکستان میں نشریات پر روك لگانے کا فیصلہ کیا۔

Apr 03, 2019 12:37 PM IST | Updated on: Apr 03, 2019 12:37 PM IST
پاکستان میں آئی پی ایل نشریات پر پابندی ، عمران حکومت نے لگایا یہ سنگین الزام

آئی پی ایل ٹرافی

پاکستان کابینہ نے دنیا بھر میں مشہور انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) ٹوئنٹی 20 ٹورنامنٹ کی پاکستان میں نشریات پر روك لگانے کا فیصلہ کیا۔ پاکستان کے اطلاعات و نشریات کے وزیر فواد چودھری نے ہندوستان پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ "سیاسی اختلافات کا کھیل پر کوئی اثر نہیں ہونا چاہئے ، لیکن ہم نے پاکستان کے شہریوں، فنکاروں اور کرکٹ کھلاڑیوں کے تئیں ہندوستان کے سلوک کو دیکھا ہے"۔

فواد چودھری نے نے ایک مرتبہ ہندوستانی ٹیم کے فوج کی ٹوپی پہن کر کھیلنے کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ "آسٹریلیا کے خلاف میچ کے دوران ہندوستانی کرکٹ کھلاڑیوں کا فوج کی ٹوپی پہننا کسی بھی طورپر مناسب نہیں تھا"۔ خیال رہے کہ ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے آسٹریلیا کے خلاف ایک روزہ میچوں کی سیریز کا تیسرا میچ فوج کی ٹوپی پہن کر کھیلا تھا۔ اس وقت بھی پاکستان نے اعتراض کیا تھا ، مگر آئی سی سی نے دوٹوک الفاظ میں پاکستان کو جواب دیدیا تھا کہ ہندوستانی نے ایسا اُس کی اجازت دے کیا ہے۔

Loading...

ساتھ ہی ساتھ مسٹر چودھری نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کے بعد پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کے دوران ہندوستانی براڈ کاسٹر نے نشریات بند کر کے لیگ کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ نشریات کی وزارت نے آئی پی ایل پر کابینہ کی پابندی کی تجویز دی ہے اور جیسے ہی کابینہ اس کی تصدیق کر دیتی ہے ، تو پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی یقینی بنائے گی کہ آئی پی ایل میچوں کو ٹی وی چینلوں پر نہیں دکھایا جائے۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔

Loading...