جنوبی افریقہ کی ٹیم سے لیا تھا ریٹائرمنٹ، اب اس ٹیم کے لئے کھیلیں گے ہاشم آملہ

اس سال انگلینڈ میں ہوئےآئی سی سی عالمی کپ کے بعد ہاشم آملہ نے بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔

Oct 09, 2019 02:29 PM IST | Updated on: Oct 09, 2019 02:33 PM IST
جنوبی افریقہ کی ٹیم سے لیا تھا ریٹائرمنٹ، اب اس ٹیم کے لئے کھیلیں گے ہاشم آملہ

ہاشم آملہ کاؤنٹی کلب سرے سے منسلک ہونے والے ہیں۔

بین الاقوامی کرکٹ کو الوداع کہہ چکے جنوبی افریقہ کےعظیم کھلاڑی ہاشم آملہ جلد ہی کاؤنٹی کرکٹ کھیلتےہوئے نظرآسکتے ہیں۔ خبروں کے مطابق ہاشم آملہ کاؤنٹی کلب سرے کے ساتھ منسلک ہونے والے ہیں۔ ای ایس پی این کرک انفوکے مطابق 36 سالہ کرکٹر ہاشم آملہ جلد ہی سرے کے ساتھ آئندہ دو سال کے لئے معاہدہ کرنے والے ہیں۔ سرے کلب کا یہ دوسرا کولپیک معاہدہ ہے۔ اس سے قبل وہ مورنے مورکل کوکلب کےساتھ منسلک کرچکا ہے۔

حالانکہ اس کی وجہ سےاسے مسلسل تنقید کا شکارہونا پڑرہا ہے۔ کلب نےاس پروضاحت دیتے ہوئےکہا ہےکہ وہ ملک کےلئےکھیل رہےکھلاڑیوں کی کمی پوری کرنےکےلئے کولپیک معاہدہ کرچکےکھلاڑیوں کوشامل کررہے ہیں۔ کلب اس کوشش میں ہےکہ آئندہ دو ہفتے میں ہاشم آملہ کے ساتھ معاہدہ کے تمام اصول وضوابط پورے کرلئے جائیں۔

Loading...

عالمی کپ کے بعد ہاشم آملہ نے لیا تھا ریٹائرمنٹ

اس سال انگلینڈ میں ہوئےآئی سی سی عالمی کپ کے بعد ہاشم آملہ نے بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔ حالانکہ انہوں نے تبھی واضح کردیا تھا کہ وہ گھریلوکرکٹ میں کھیلنا جاری رکھیں گے۔ ہاشم آملہ نے ٹی -20 ، ونڈے اورٹسٹ فارمیٹ میں کل ملا کر 349 میچ کھیلے ہیں، جس میں انہوں نے 18 ہزاررن بنائے ہیں۔ وہ ٹسٹ کرکٹ میں ٹرپل سنچری لگانےوالے واحد جنوبی افریقی کرکٹر ہیں۔ وہیں ونڈے میں بھی ہاشم آملہ کے ریکارڈ کمال کے ہیں۔ 27 ونڈے سنچری لگانے والے ہاشم آملہ سب سے تیز6000, 5000, 4000,3000, 2000 اور 7000 رن بنانے والے کرکٹرہیں۔

ہاشم آملہ نے جنوبی افریقہ کے لئےکئی زبردست اننگ کھیل کی ٹیم کو جیت دلائی ہے۔ ہاشم آملہ نے جنوبی افریقہ کے لئےکئی زبردست اننگ کھیل کی ٹیم کو جیت دلائی ہے۔

کیا ہے کولپیک ڈیل

کولپیک ڈیل کے مطابق جن بھی ممالک کے یوروپین یونین کے ساتھ آزاد تجارت کے معاہدے ہیں، ان ممالک کے لوگ یوروپین یونین میں کام کرسکتے ہیں۔ 2004 میں جنوبی افریقہ کے کلاؤڈ ہینڈرسن کولپیک معاہدہ کو دستخط کرنے والے پہلے کھلاڑی تھے۔ گزشتہ 15 سال میں کولپیک ڈیل کرنے والے کھلاڑیوں میں سب سے بڑی تعداد جنوبی افریقی کھلاڑیوں کی ہی ہے، جس کے سبب قومی ٹیم کو کافی نقصان ہوا ہے۔ کرکٹ جنوبی افریقہ اب اس معاہدے کو لے کرکوئی بڑی تبدیلی کرنے پرغورکررہا ہے۔

Loading...