تاریخی گلابی ٹیسٹ میں ایشانت شرما نے خطرناک گیند بازی سے بنایا ریکارڈ، ہندوستان کے سامنے بنگلہ دیش 106 رنوں پرڈھیر

بنگلہ دیش کی ٹیم نےاپنی وزیراعظم شیخ حسینہ کے سامنے مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا اورپوری ٹیم نے106 رن پرگھٹنےٹیک دیئے۔ ایشانت نے گلابی گیند سےقہربرپا کرتے ہوئے 12 اوورمیں 22 رن دے کر5 وکٹ لئے۔

Nov 22, 2019 08:31 PM IST | Updated on: Nov 22, 2019 08:36 PM IST
تاریخی گلابی ٹیسٹ میں ایشانت شرما نے خطرناک گیند بازی سے بنایا ریکارڈ، ہندوستان کے سامنے بنگلہ دیش 106 رنوں پرڈھیر

بنگلہ دیش کے خلاف ایشانت شرما نے گلابی گیند سے بنایا ریکارڈ

کولکاتا:  ایشانت شرما (22 رن پر پانچ وکٹ) کی قیادت میں تیزگیندبازوں کی بہترین کارکردگی سے ہندوستان نے ایڈن گارڈن میدان پرجمعہ سے شروع ہوئے تاریخی گلابی ٹیسٹ کے پہلے دن بنگلہ دیش کو لنچ کے بعد 30.3 اوورمیں محض 106 رنوں پرڈھیرکر دیا۔ہندستان اور بنگلہ دیش کے درمیان گلابی گیند سے یہ پہلا دن رات ٹیسٹ ہے اور دو میچوں کی سیریز کا دوسرا اور آخری میچ ہے۔ بنگلہ دیش نے ٹاس جیتنے کے بعد پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا جو سرے سے غلط ثابت ہوا۔ مہمان ٹیم نے لنچ تک 21.4 اوورمیں محض 73 رن جوڑکر6 وکٹ اوراگلے سیشن میں باقی 4 وکٹ 33 رن جوڑکرگنوا دیئے۔

بنگلہ دیش کی ٹیم نےاپنی وزیراعظم شیخ حسینہ کے سامنے مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا اورپوری ٹیم نے106 رن پرگھٹنے ٹیک دیئے۔ ایشانت نے گلابی گیند سے قہر برپا کرتے ہوئے 12 اوور میں 22 رن دے کر5 وکٹ لئے۔ امیش یادو نے 7 اوور میں 29 رن پر تین وکٹ اورمحمد سمیع نے 10.3 اوور میں 36 رن پردووکٹ لئے۔ لیفٹ آرم اسپنررویندرجڈیجہ نے اننگ میں محض ایک اوور پھینکا جبکہ آف اسپنر روی چندرن اشون کو بولنگ کرنے کا موقع نہیں ملا۔31 سالہ ایشانت نے اپنےکیریئر میں 10 ویں بار اننگ میں پانچ وکٹ حاصل کئے اور 96 ٹسٹ میچوں میں ان کے 288 وکٹ ہو گئے ہیں۔ ہندستانی تیزگیند بازوں نے بنگلہ دیشی بلے بازوں کوٹکنےکا کوئی موقع نہیں دیا۔ مہمان ٹیم کے اوپنر شادمن اسلام 29، لٹن داس 24 ریٹائرڈ ہرٹ اور نعیم حسن 19 رنز بنا کر دھائی کے ہندسے میں پہنچنے والے تین بلےبازرہے۔ بنگلہ دیش کےچاربلے بازوں کا اکاؤنٹ تک نہیں کھلا۔

محمد شمی نے اپنی گیند بازی سے بنگلہ دیش کے دو بلے بازوں کو زخمی کیا۔ محمد شمی نے اپنی گیند بازی سے بنگلہ دیش کے دو بلے بازوں کو زخمی کیا۔

Loading...

بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ اورمغربی بنگال کی وزیراعلی ممتا بنرجی نے صبح میچ میں ایڈن گارڈن کے روایتی گھنٹہ بجا کردونوں ٹیموں کے پہلے ڈے نائٹ ٹیسٹ کا افتتاح کیا تھا، لیکن مہمان ٹیم کا آغازکافی خراب رہا اور صرف 38 رن پراس نےاپنے پانچ وکٹ گنوا دیئے۔ سلامی بلےبازشادمان اسلام نے پہلے وکٹ کےلئےامرؤالقیس کے ساتھ صرف 15 رن جوڑے تھےکہ امرؤالقیس کوایشانت نےایل بی ڈبلیو کرساتویں اوور کی تیسری گیند پرہی ہندستان کو گلابی گیند سے اس کا پہلا وکٹ دلا دیا۔ کپتان مومن الحق کوامیش نے روہت شرما کے ہاتھوں کیچ کرایا اورکھاتہ کھولے بغیرہی بنگلہ دیشی کپتان پویلین لوٹ گئے۔ محمد جیمنی بھی سات گیند تک ٹکنےکا جذبہ دکھاسکےاورامیش نےانہیں بولڈ کیا۔ جیمنی بھی صفرپرآؤٹ ہوئے۔ اس کے بعد مشفق الرحیم کا بھی یہی حشرہوا اورمحمد سمیع نے انہیں بولڈ کرکے گھریلومیدان پر اپنا پہلا گلابی وکٹ لیا اورہندوستان کو اس کا چوتھا وکٹ دلا دیا۔ رحیم چار گیندوں میں صفر پر آؤٹ ہوئے۔

بنگلہ دیشی ٹیم کی انتہائی خراب بیٹنگ یہیں نہیں رکی اور سلامی بلے باز شادمان کا صبر بھی ٹوٹ گیا جنہوں نے 52 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر 29 رن بنائے جو لنچ تک ٹیم کا سب سے بڑا اسکور بھی رہا۔ شادمان کو بھی امیش نے آؤٹ کیا اور اسٹمپس کے پیچھے وکٹ کیپر ردھمان ساہا کے ہاتھوں انہیں کیچ کرایا۔ یکطرفہ سے لگ رہے اس میچ میں مہمان ٹیم نے 15 ویں اوور کی دوسری گیند پر 38 رن جوڑ کر اپنے پانچ وکٹ گنوا دیئے۔لنچ سے پہلے محموداللہ چھ رن بنا کر ایشانت کی گیند پر ساہا کو کیچ دے بیٹھے اور مہمان ٹیم کو چھٹا وکٹ بھی گر گیا۔ محموداللہ نے 21 گیندوں میں ایک چوکا لگایا۔ لنچ تک نعیم حسن صفر پر ناٹ آؤٹ تھے ۔

وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے ٹیم انڈیا کے کھلاڑی۔ وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے ٹیم انڈیا کے کھلاڑی۔

لنچ کے بعد بنگلہ دیش کی اننگز کو سمٹنے میں زیادہ وقت نہیں لگا۔ لنچ سے پہلے کے آخری اوور میں لٹن داس ریٹائرڈ ہرٹ ہوگئے۔ انہوں نے 27 گیندوں پر پانچ چوکوں کی مدد سے 24 رن بنائے۔ ایشانت نے لنچ کے بعد تین وکٹ نکالے اور سمیع نے ایک وکٹ لیا۔نعیم 19، عبادت حسین 1، مہدی حسن 8 اور ابو زید کھاتہ کھولے بغیر پویلین لوٹ گئے۔ گلابی گیند کے سامنے بنگلہ دیشی بلے بازوں کو جیسے سانپ سونگھ گیا اور ایڈن گارڈن کے میدان پر انہوں نے گھٹنے ٹیک دئے ۔ ہندستانی تیز گیند بازوں کے دبدبے کا عالم یہ تھا کہ ٹیم انڈیا کے دونوں اسپنروں کو کچھ بھی کرنے کا موقع نہیں ملا۔ جڈیجہ نے ایک اوور پھینکا جبکہ اشون خالی فیلڈنگ کرتے رہ گئے۔ ایشانت نے اپنے پانچ وکٹ پورے کئے اور گزشتہ 12 برسوں میں یہ پہلا موقع ہے جب دہلی کے اس تیز گیند باز نے ہندستان میں ایک اننگز میں پانچ وکٹ حاصل کئے ہیں۔ انہوں نے تقریبا چیختے ہوئے اپنی اس کامیابی کا جشن منایا جس کے لئے ٹیم کے ساتھیوں نے انہیں مبارک باد دی۔

Loading...