بوکھلائے پاکستان کا ہندوستان پرالزام، آئی پی ایل سے باہرکرنےکی دھمکی دے کرسری لنکائی کرکٹروں کوپاکستان آنے سے روکا

پاکستان کےسائنس اورٹکنالوجی کےوزیر چودھری فواد حسین نے ہندوستان پرپاکستان کا دورہ کرنےکی صورت میں سری لنکائی کھلاڑیوں کودھمکی دینے کا الزام عائد کیا ہے۔

Sep 10, 2019 05:33 PM IST | Updated on: Sep 10, 2019 05:46 PM IST
بوکھلائے پاکستان کا ہندوستان پرالزام، آئی پی ایل سے باہرکرنےکی دھمکی دے کرسری لنکائی کرکٹروں کوپاکستان آنے سے روکا

پاکستان کے وزیر فواد حسین نےایک بار پھرمتنازعہ بیان دیا ہے: فائل فوٹو

کراچی: 10 سری لنکائی کھلاڑیوں کے نام واپس لینے کے بعد سری لنکا کا پاکستان کا دورہ کھٹائی میں پڑتا نظرآرہا ہے۔ اس سے پاکستان کے ملک میں کرکٹ کی واپسی کی کوششوں کو جھٹکا لگ سکتا ہے۔ سال 2009 میں سری لنکائی ٹیم کے پاکستان دورے پردہشت گردانہ حملہ ہوا تھا۔ تب گدافی اسٹیڈیم کےباہربم دھماکےمیں سری لنکا کےکئی کھلاڑی زخمی ہوگئے تھے۔ اس دہشت گردانہ واقعہ کے بعد سے ہی کرکٹ دنیا کی بڑی ٹیموں نے پاکستان دورے کا بائیکاٹ کرنا شروع کردیا تھا۔

حال ہی میں سری لنکا نے پاکستان کا دورہ کرنےکےلئےاتفاق ظاہرکیا تھا۔ حالانکہ جب کھلاڑیوں سے اس بارے میں بات کی گئی توٹیم کے 10 کھلاڑیوں نے اپنی عدم دستیابی ظاہر کردی۔ اس کے بعد بوکھلائے پاکستان نے اسے ہندوستان کی سازش قراردیا ہے۔ سری لنکا کا پاکستان دورہ کھٹائی میں پڑتا ہوا دیکھ کرپاکستان کے سائنس اورٹکنالوجی کے وزیرچودھری فواد حسین نے انڈین اسپورٹس اتھارٹیزپرسری لنکائی کھلاڑیوں کو دھمکی دے کر پاکستان کا دورہ کرنےسے روکنےکا الزام عائد کیا ہے۔

Loading...

چندریان -2 پرتبصرہ کے سبب بھی کراچکے ہیں فضیحت

پاکستان کے وزیرفواد حسین نےاپنےآفیشیل ٹوئٹرہینڈل پرلکھا ہےکہ کچھ کھیل کمینٹیٹروں نے بتایا ہےکہ ہندوستان نےکچھ سری لنکائی کھلاڑیوں کودھمکی دی ہےکہ یا تووہ پاکستان دورے سے نام واپس لے لیں یا پھران کا آئی پی ایل معاہدہ منسوخ کردیا جائےگا۔ یہ انتہائی گھٹیا حرکت ہے۔  فواد حسین اس سےقبل ہندوستان کےچندریان -2 مشن سےمتعلق کئےگئے تبصرہ کولےکربھی اپنی فضیحت کراچکے ہیں۔ انہوں نے چندریان -2 کو پیسےکی بربادی قراردیا تھا، جس کے بعد پاکستان میں ہی انہیں سوشل میڈیا پرکافی کھری کھوٹی سنائی گئی۔

یہ ہے دورہ کا پروگرام

سری لنکائی ٹیم کوپاکستان دورے پرونڈے اورٹی -20 سیریزکھیلنی ہے۔ سری لنکا کوکراچی اورلاہورمیں تین ونڈے اورتین ٹی-20 مقابلے کھیلنےہیں۔ یہ دورہ 27 ستمبرسے 9 اکتوبرکےدرمیان کھیلا جانا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے کہا ہے کہ بھلے ہی کچھ سری لنکائی کھلاڑیوں نےنام واپس لے لئے ہیں، لیکن اس کا دورہ پراثرنہیں پڑے گا۔ سری لنکا کا پاکستان دورہ طے پروگرام کے مطابق ہی ہوگا۔

Loading...