ورلڈ کپ سے قبل پاکستانی ٹیم میں چھڑ گئی'جنگ'، تیزگیند بازنے پاکستان کرکٹ بورڈ پرکیا طنز

گیند بازجنید خان نےعالمی کپ 2019 کے لئے ٹیم سے باہرکرنے پرسوشل میڈیا پراپنا ردعمل ظاہرکیا ہے۔ انہوں نے منہ پرٹیپ لگی ہوئی تصویرپوسٹ کی ہے۔

May 20, 2019 10:55 PM IST | Updated on: May 20, 2019 10:56 PM IST
ورلڈ کپ سے قبل پاکستانی ٹیم میں چھڑ گئی'جنگ'، تیزگیند بازنے پاکستان کرکٹ بورڈ پرکیا طنز

پاکستان کے تیزگیند بازجنید خان عالمی کپ ٹرافی کے ساتھ۔

آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے لئے پاکستان کرکٹ ٹیم کا اعلان ہوگیا ہے، اس میں تین تبدیلیاں کرتے ہوئے تیزگیند باز وہاب ریاض کوشامل کیا گیا ہے۔ ریاض کو جنید خان کو باہرکرکے جگہ دی گئی ہے۔ جنید کےعلاوہ عابد علی اورفہیم اشرف کو بھی باہرکاراستہ دکھا دیا گیا ہے۔ ان کی جگہ محمد عامراورآصف علی کوموقع دیا گیا ہے۔

ٹیم میں تبدیلی کا اعلان کرتے ہوئےانضام الحق نےکہا 'وہاب ریاض کی گیند کوریورس سوئنگ کرنے کی صلاحیت کی وجہ سے انہیں ٹیم میں منتخب کیا گیا ہے'۔ اس کے بعد جنید خان نے سوشل میڈیا پراپنا ردعمل ظاہرکیا ہے۔ انہوں نےمنہ پرٹیپ لگی ہوئی تصویرپوسٹ کی ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے لکھا 'میں کچھ نہیں کہنا چاہتا، سچ کڑوا ہوتا ہے'۔

Loading...

ناکام وہاب ریاض کے آگے ہٹ جنید درکنار

جنید خان نے یہ تصویرٹوئٹرپرڈالتے ہوئے لکھا 'سچ کڑوا ہوتا ہے'۔ جنید خان نے یہ تصویرٹوئٹرپرڈالتے ہوئے لکھا 'سچ کڑوا ہوتا ہے'۔

ریکارڈوں پرنظرڈالی جائے تو سامنے آتا ہے کہ جنید خان کا انگلینڈ میں زبردست ریکارڈ رہا ہے۔ انہوں نے یہاں پر9 میچ کھیلے اور36.2 کی اوسط سے 11 وکٹ حاصل کئے۔ وہیں عالمی کپ 2015 کے بعد سے وہ پاکستان کےلئے دوسرے سب سے کامیاب گیند بازرہے۔ انہوں نےگزشتہ چارسال میں 35 وکٹ حاصل کئے، ان سےآگے صرف حسن علی ہیں، جنہوں نے 80 وکٹ حاصل کئے۔ جبکہ وہاب ریاض کی کارکردگی انگلینڈ میں بے حد خراب رہی۔ وہ ساتویں میچ میں صرف 4 وکٹ حاصل کرسکے ہیں اوران کا وکٹ لینے کا اوسط 96.25 کا رہا ہے۔

بدقسمت جنید خان

وہ 2011 عالمی کپ کےلئے بھی پاکستانی ٹیم میں شامل تھے، لیکن ایک بھی میچ نہیں کھیل پائے۔ اس کے بعد 2015 کرکٹ ورلڈ کپ میں انہیں پاکستانی ٹیم میں منتخب کیا گیا تھا، لیکن ٹورنامنٹ سے 20-15 دن پہلے وہ زخمی ہوگئے اورعالمی کپ سے باہرہوگئے۔ اس باربھی انہیں پاکستان کی ابتدائی ٹیم میں شامل کرلیا گیا تھا، لیکن سلیکٹروں نےعین موقع پرانہیں باہر کردیا۔

خاص بات یہ ہے کہ وہاب ریاض طویل وقت سے ونڈے کرکٹ سےدورہیں۔ انہوں نے 2017 میں اپنا آخری میچ کھیلا تھا۔ پاکستان کےلئے79 ونڈے میچوں میں 34.34 کی اوسط سے 102 وکٹ لینے والےاس طوفانی گیند بازنے ہندوستان کے خلاف برمنگھم میں 4 جون 2017 کو آخری بار ونڈے میچ کھیلا تھا۔ حالانکہ وہ 2011 اور2015 عالمی کپ میں ٹیم کا حصہ تھے۔ اس دوران انہوں نے 12 میچوں میں 21.91 کی اوسط سے 24 وکٹ حاصل کئے تھے اورسب سے بہترین کارکردگی 46 رن دے کرپانچ وکٹ لینا رہا ہے۔

عالمی کپ کے لئے پاکستان کی فائنل ٹیم۔

 سرفراز احمد (کپتان )، فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم، محمد حفیظ، شعیب ملک، حارث سہیل، آصف علی، عماد وسیم، شاداب خان، حسن علی، محمد عامر، وہاب ریاض، محمد حسنین،  شاہین آفریدی

Loading...