پاکستانی ٹیم کی گھرمیں ہوئی بےعزتی، شعیب اختراور یونس خان نے سرعام اڑایا مذاق

ایک تقریب کےدوران یونس خان اورشعیب اخترنےایک خالی کرسی کی طرف اشارہ کرکے یہ بتانےکی کوشش کی، کہ بینچ اسٹرینتھ کے معاملے میں پاکستان کی حالت کتنی گئی گزری ہے۔

Oct 08, 2019 05:40 PM IST | Updated on: Oct 08, 2019 05:42 PM IST
پاکستانی ٹیم کی گھرمیں ہوئی بےعزتی، شعیب اختراور یونس خان نے سرعام اڑایا مذاق

پاکستان کی ٹیم سری لنکا کے خلاف ٹی -20 سیریز ہارنے کی وجہ سے ناقدین کے نشانے پرہے۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کےلئے وقت شاید اچھا نہیں چل رہا ہے۔ بے شک ملک میں چارسال بعد بین الاقوامی کرکٹ ٹیم کی واپسی ہوئی ہےاورسری لنکا کے خلاف ونڈے سیریزمیں بھی ٹیم نے 0-2 سےقبضہ کرلیا۔ مگرٹی -20 سیریزمیں سری لنکا کی کمزورٹیم نے 0-2 کی ناقابل تسخیرسبقت بناکرپاکستانی خیمے میں ہلچل مچادی ہے۔ سیریزکا تیسرا مقابلہ 9 اکتوبرکو کھیلا جائےگا، لیکن پاکستان کے سابق کرکٹرٹیم کی موجودہ کارکردگی سے بے حد ناراض ہیں۔ ٹیم کےسابق تیزگیند بازشعیب اخترٹیم سلیکشن کولےکراپنی ناراضگی ظاہرکرچکے ہیں اوراب سابق بلےبازیونس خان نےبھی شعیب اخترکےساتھ  مل کرپاکستان کی بینچ اسٹرینتھ کو لے کر سوال اٹھائے ہیں۔

سری لنکا کےخلاف تین میچوں کی ٹی -20 سیریزکے پہلےدومقابلوں میں پاکستان کوشکایت کا سامنا کرنا پڑا۔ مہمان ٹیم نےپہلےمیچ میں 64 رن سے بڑی جیت درج کی، وہیں دوسرے میچ میں سری لنکا نے35 رن سے بازی ماری۔ اس خراب کارکردگی کے بعد پاکستان کواب اپنوں کےہاتھوں ہی فضیحت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ ٹیم کےسابق تیزگیند بازشعیب اختراور سابق بلےبازیونس خان نےایک پروگرام میں پاکستان کرکٹ بورڈ اوراس میں چل رہی مبینہ سیاست کی دھجیاں اڑا کررکھ دی ہیں۔

Loading...

پی سی بی بھول گیا، کیسے بنائی جاتی ہے ٹیم

دراصل پروگرام میں جب بات پاکستانی کرکٹ ٹیم کی بینچ اسٹرینتھ کی آئی تویونس خان اور شعیب اخترنےایک خالی کرسی کی طرف اشارہ کرکے یہ بتانےکی کوشش کی، کہ بینچ اسٹرینتھ کے معاملے میں پاکستان کی حالت کتنیبدترہے۔ شعیب اخترنےمصباح الحق کوکوچ اورسلیکٹرکی ذمہ داری دیئےجانے پرسوال کھڑے کئے۔ انہوں نےکہا 'پاکستان کرکٹ بورڈ بھول گیا ہےکہ ٹیم کیسے بنائی جاتی ہے۔ وہ پیسے بچانے میں لگا ہوا ہے۔ کسی ایک شخص کو ساری طاقت اورذمہ داری دے کرپاک کرکٹ میں کبھی بھی سدھارنہیں کیا جاسکتا۔ آپ ایسا کرکے پیسے بچا سکتے ہیں، لیکن پاک کرکٹ میں سدھارتبھی ہوگا جب بورڈ ایسےلوگوں کی طرف دیکھنا شروع کرے گا، جنہیں صلاحیت کی تلاش کرنا آتا ہے'۔

ہندوستان سے سیکھے پاکستان

پاکستان کے سابق بلے بازیونس خان نے ہندوستان کی مثال دیتے ہوئےکہا کہ وہاں سوربھ گانگولی اورراہل دراوڑ گراس روٹ لیول پرباصلاحیت کھلاڑیوں کی تلاش کررہے ہیں۔ پاکستان کوبھی موجودہ بحران سےنمٹنےکےلئےایسے ہی سابق کرکٹروں سے مدد لینی ہوگی۔ وہیں شعیب اخترنے وراٹ کوہلی کوبہترین کپتان بتایا۔ انہوں نےکہا کہ وراٹ کوہلی گیند بازوں کےکپتان ہیں، جب وہ گیند بازوں کےساتھ ہوتے ہیں توکپتانی نہیں کرتے۔ بلکہ گیند بازوں کے ذریعہ اپوزیشن ٹیم کی دھجیاں اڑائے جانے کا لطف اٹھاتے ہیں۔ ہندوستانی گیند بازوں کے لئے یہ اچھی بات ہے کہ ان کے پاس اتنا بہترین کپتان ہے۔

Loading...