طلاق شدہ خاتون کا تین سالوں تک کیا جنسی استحصال ، حاملہ ہوئی تو عاشق نے اٹھایا یہ گھنونا قدم

شادی کا جھانسہ دے کر مطلقہ خاتون کا جنسی استحصال کیا گیا ۔ خاتون جب حاملہ ہوئی تو دھوکہ سے دوا دے کر اس کا اسقاط حمل بھی کروادیا گیا ۔

Sep 25, 2019 10:32 PM IST | Updated on: Sep 25, 2019 10:32 PM IST
طلاق شدہ خاتون کا تین سالوں تک کیا جنسی استحصال ، حاملہ ہوئی تو عاشق نے اٹھایا یہ گھنونا قدم

علامتی تصویر

بہار کے بیگو سرائے میں محبت ، سیکس ، شادی اور دھوکہ کا ایک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ اس معاملہ میں الزام ہے کہ شادی کا جھانسہ دے کر طلاق شدہ خاتون کا تین سالوں تک جنسی استحصال کیا گیا ۔ بعد میں شکایت پر پولیس نے ملزم کو گرفتار کیا تو تھانہ میں ہی اس کی شادی کروادی گئی ۔ شادی کے بعد اب سسرال والے خاتون کو رکھنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مار پیٹ کر اس کو گھر سے بھگا دیا ہے ۔ اب متاثرہ انصاف کیلئے انتظامیہ سے فریاد کررہی ہے ۔

اطلاعات کے مطابق شادی کا جھانسہ دے کر مطلقہ خاتون کا جنسی استحصال کیا گیا ۔ خاتون جب حاملہ ہوئی تو دھوکہ سے دوا دے کر اس کا اسقاط حمل بھی کروادیا گیا ۔ خاتون کی حالت بگڑی تو اس کو اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ۔ سنگین حالت میں چھوڑ کر عاشق فرار ہوگیا ۔ خاتون نے جب اس کی شکایت نگر تھانہ پولیس سے کی ، تو ملزم کو گرفتار کرکے زویرو مائل تھانہ پولیس کے حوالے کردیا گیا ۔ متاثرہ کا الزام ہے کہ گرفتاری کے بعد پولیس اور پنچوں کے ذریعہ تھانہ میں ہی اس کی شادی کروائی گئی ۔

Loading...

بتایا جا رہا ہے کہ خاتون کا اپنے شوہر سے 2016 میں طلاق ہوگیا تھا ۔ طلاق کے بعد وہ اپنے مائیکے میں رہ رہی تھی ۔ خاتون کا الزام ہے کہ شادی کے بعد وہ تین ستمبر کو سسرال پہنچی تو شوہر اور سسرال والوں نے جہیز میں ایک کٹھا زمین اور تین لاکھ روپے کا مطالبہ کیا اور مار پیٹ کر اس کو گھر سے بھگا دیا ۔ خاتون کا الزام ہے کہ شوہر نے پولیس سے مل کر اس کے خلاف بھی مقدمہ درج کروا دیا ہے ۔ اس سلسلہ میں صدر ڈی ایس پی راجن سنہا نے بتایا کہ دونوں نے شادی کی تھی ، مگر خاتون کے سسرال والے اس کو رکھنے کیلئے تیار نہیں ہیں ۔ اس سلسلہ میں کیس درج کرکے آگے کی کارروائی کی جارہی ہے ۔

Loading...