سب انسپکٹر کی بیوی سے ہوٹل میں کیا یہ گھنونا کام، 2 ملزم گرفتار: جانیں پورا معاملہ

متاثرہ خاتون نے جن تین لوگوں پر اجتماعی عصمت دری کا الزام لگایا ہے، وہ سبھی شہر کے ہی ہیلتھ کیئر کمپنی میں کام کرتے ہیں۔

Sep 28, 2019 08:54 AM IST | Updated on: Sep 28, 2019 08:54 AM IST
سب انسپکٹر کی بیوی سے ہوٹل میں کیا یہ گھنونا کام، 2 ملزم گرفتار: جانیں پورا معاملہ

علامتی تصویر

پٹنہ: بہار کے گیا ضلع کی رہنے والی خاتون سے پٹنہ کے ایک ہوٹل میں ہوئے گینگ ریپ کے معاملے میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے دو ملزموں کو گرفتار کرلیا ہے۔ واقعہ گزشتہ اگست مہینے کا ہے۔ اطلاعات کے مطابق متاثرہ خاتون ایک بیٹے کی ماں ہے اور شوہر کی موت ہوچکی ہے۔ اس کے شوہر بہار پولیس میں سب انسپکٹر تھے۔ شوہر کی موت کے بعد متاثرہ کام کے سلسلے میں ملزم کے رابطے میں آئی تھی جو اس کے ہی گھر پر کرائے میں رہنے آیا تھا۔ خاتون کا الزام ہے کہ کام کا لالچ دیکر ملزم نے اس سے دوستی بڑھائی اور کئی مرتبہ پیسے بھی لئے۔ اس دوران ملزم نے کام دلانے کی بات کہہ کر خاتون کی کئی لوگوں سے ملاقات بھی کروائی۔

پٹنہ کے ہوٹل میں اجتماعی عصمت دری

متاثرہ نے بتایا کہ ملزم نے بعد میں اسی جگہ کام پر لگوا دیا تھا جہاں وہ خود نوکری کرتا تھا۔ پھر ملزم بہانے بناکر اسے الگ۔الگ جگہ بلاتا تھا لیکن متاثرہ منع کردیتی تھی۔ اس کے بعد ایک دن کام کا بہانہ بناکر ملزم نے اسے پٹنہ کے ایک ہوٹل میں بلایا۔ راجدھانی کے راجا بازار میں واقع ہوٹل میں متاثرہ کی اجتماعی عصمت دری کی واردات کو انجام دیا۔

متاثرہ خاتون نے جن تین لوگوں پر اجتماعی عصمت دری کا الزام لگایا ہے، وہ سبھی شہر کے ہی ہیلتھ کیئر کمپنی میں کام کرتے ہیں۔ خاتون نے مہیلا تھانہ میں گینگ ریپ کی تحریری ایف آئی آر درج کروائی جس کے بعد متاثرہ کو میڈیکل کیلئے بھیجا گیا۔ پولیس نے تینوں ملزموں کو حراست میں لیکر ان سے گھنٹوں پوچھ۔گچھ کی جس کے بعد جمعرات کی دیر رات مہیلا تھانہ نے ان میں سے دو کو گرفتار کر لیا۔ فی الحال پولیس اس معاملے میں کچھ بھی بولنے سے بچ رہی ہے۔ وہیں ملزموں نے خود کو بے قصور بتایا ہے۔

Loading...

(نینسی کی رپورٹ)

 

Loading...