خاتون کی اجتماعی آبروریزی کے چار ملزموں کو 20 ، 20 سال قید کی سزا

رتلام : مدھیہ پردیش کے ضلع رتلام کی ایک عدالت نے ایک خاتون کی اجتماعی آبروریزی کے معاملے میں مجرم قرار پانے والے چار ملزمان کو بیس بیس سال قید کی سزا سنائی ہے۔

Feb 07, 2016 03:10 PM IST | Updated on: Feb 07, 2016 03:10 PM IST
خاتون کی اجتماعی آبروریزی کے چار ملزموں کو 20 ، 20 سال قید کی سزا

رتلام : مدھیہ پردیش کے ضلع رتلام کی ایک عدالت نے ایک خاتون کی اجتماعی آبروریزی کے معاملے میں مجرم قرار پانے والے چار ملزمان کو بیس بیس سال قید کی سزا سنائی ہے۔

خصوصی جج ڈی این شکلا نے ناملي تھانہ علاقہ کے بڑوديا گاؤں میں ایک تیس سالہ خاتون کی اجتماعی آبروریزی کے معاملے میں قصوروار قرار پانے والے گووند، سریش، لاكھن سنگھ اور سریش پرمار کو کل بیس بیس سال قید بامشقت کے ساتھ ایک ایک ہزار روپے کے جرمانے کی سزا سنائی۔ ملزمان نے خاتون کے شوہر اور اس کی بیٹے کو جان سے مارنے کی دھمکی دے کر اس کی اجتماعی آبروریزی کی تھی۔

استغاثہ کے مطابق بڑوديا گاؤں میں یکم مارچ 2013 کی رات فارم پر بنے مکان میں اپنے شوہر اور بیٹی کے ساتھ سوئی ہوئي عورت کی ملزم لاكھن ، سریش، گووند اور سریش پرمار نے اس کی بیٹی اور شوہر کو قتل کرنے کی دھمکی دے کر آبروریزی کی تھی۔

متاثرہ خاتون کے شوہر نے جب بیوی کو بچانے کی کوشش کی تو ایک ملزم نے اس پر کلہاڑی سے وار کر دیا۔ اس کے بعد ملزمان وہاں سے بھاگ نکلے۔

Loading...

Loading...