اجتماعی عصمت دری سے حاملہ ہوئی نابالغ طالبہ، بدنامی کے ڈر سے کر ڈالا یہ ہوش اڑا دینے والا کام

اہل خانہ کے تھانہ پہنچنے سے پہلے ہی بدنامی کے ڈر سے متاثرہ نے گھر میں بنے پانی کی ٹنکی میں کود کر جان دے دی۔

Sep 28, 2019 12:28 PM IST | Updated on: Sep 28, 2019 12:28 PM IST
اجتماعی عصمت دری سے حاملہ ہوئی نابالغ طالبہ، بدنامی کے ڈر سے کر ڈالا یہ ہوش اڑا دینے والا کام

علامتی تصویر

باڑ میر: راجستھان کے باڑمیر ضلع میں اجتماعی عصمت دری کی شکار نابالغ طالبہ کے خود کشی کر لینے کا سنسنی خیز معاملہ سامنے آیا ہے۔ گینگ ریپ متاثرہ حاملہ ہو گئی تھی۔ ملزمان اس پر اسقاط حمل (ابورشن) کیلئے دباؤ ڈال رہے تھے۔ اہل خانہ کے تھانہ پہنچنے سے پہلے ہی بدنامی کے ڈر سے متاثرہ نے گھر میں بنے پانی کی ٹنکی میں کود کر جان دے دی۔ مہلوک کے اہل خانہ نے اب ملزموں کے خلاف معاملہ درج کرایا ہے۔ پولیس نے متاثرہ کے اہل خانہ کی رپورٹ پر معاملہ درج کر لیا ہے۔ ملزموں کی تلاش کی جارہی ہے۔

تین نامزد سمیت پانچ لوگوں پر اجتماعی عصمت دری کا الزام

پولیس کے مطابق واقعہ راگیشوری تھانہ علاقے سے جڑا ہوئی ہے۔ وہاں علاقے کے ایک سرکاری اسکول میں 11 ویں اسکول میں پڑھنے والی 15 سالہ نابالغ لڑکی کے ساتھ سائیوں کا تلا آڈیل رہائشی جیٹھ رام، جوگ رام اور ڈھیلونی ناڑی رہائشی دما رات سمیت دو دیگر اشخاص نے مل کر غلط حرکتیں کرکے اس کی ویڈیو کلپ بنالی تھی۔ پھر اس کلپ کو وائرل کرنے کی دھمکی دیکر لڑکی سے ملزموں نے اسے اسقاط حمل کیلئے دباؤ بنایا۔ ایسا نہیں کرنے پر پھر سے فحش کلپ وائرل کرنے کی دھمکی دی۔

اس درمیان لڑکی نے آخرکار 18 ستمبر کو اپنی ماں کو آپ بیتی سنائی تو اہل خانہ کے پاؤں تلے زمین کسھک گئی۔ صدمے میں آیا کنبہ بدنامی کے ڈر سے کوئی فیصلہ نہیں لے پایا۔ 22 ستمبر کو جب گھر کے لوگ پڑوس میں گئے ہوئے تھے تو اس دوران ملزموں نے موقع پاکر متاثرہ کو پھر سے ڈرایا دھمکایا۔ اس سے مجبور اور بدنامی کے ڈر سے متاثرہ نے پانی سے بھرے ٹینک میں کود کر جان دے دی۔

Loading...

معاملے کی جانچ میں مصروف پولیس

ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس کھینو سنگھ بھاٹی نے بتایا کہ اس سلسلے میں اہل خانہ نے پہلے نابالغ کی خودکشی کرنے کی رپورٹ پولیس کو دی تھی۔ اس پر پولیس نے لاش کا میڈیکل بورڈ سے پوسٹ مارٹم کرواکر اسے اہل خانہ کو سونپ دیا تھا۔ اس کے بعد اہل خانہ نے متاثرہ کے ساتھ ہوئی زیادتی کی رپورٹ لکھوائی ہے۔ پولیس معاملے کی جانچ میں مصروف ہیں۔

 

Loading...