ہماچل پردیش میں پولنگ بوتھ کے پاس کھیل رہی 9 سال کی معصوم بچی کی آبروریزی ، علاقہ میں سنسنی

لوک سبھا انتخابات کیلئے بنائے گئے ایک پولنگ بوتھ کے نزدیک ایک نو سال کی لڑکی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔

May 20, 2019 10:56 AM IST | Updated on: May 20, 2019 10:57 AM IST
ہماچل پردیش میں پولنگ بوتھ کے پاس کھیل رہی 9 سال کی معصوم بچی کی آبروریزی ، علاقہ میں سنسنی

ہماچل پردیش میں پولنگ بوتھ کے پاس کھیل رہی 9 سال کی معصوم بچی کی آبروریزی

ہماچل پردیش کی دیوبھومی کلو ضلع کو شرمسار کرنے والا ایک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ یہاں لوک سبھا انتخابات کیلئے بنائے گئے ایک پولنگ بوتھ کے نزدیک ایک نو سال کی لڑکی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ بچی کی ماں کی شکایت پر پولیس نے معاملہ درج کرلیا ہے ۔

اطلاعات کے مطابق کلو کے آنی میں یہ معاملہ پیش آیا ہے ۔ آنی تھانہ میں نو سال کی بچی کی آبروریزی کا معاملہ درج کیا گیا ہے ۔ اطلاعات کے مطابق 19 مئی یعنی اتوار کو آنی میں لوک سبھا انتخابات کیلئے پولنگ ہورہی تھی ، مقامی اسکول میں پولنگ بوتھ بنایا گیا تھا ، اسی اسکول کے گراونڈ میں یہ بچی اپنی سہیلی کے ساتھ کھیل رہی تھی ، بچی کی ماں کھیتوں میں کام کرنے کیلئے گئی تھی اور بچی کو دادا دادی کے پاس چھوڑ گئی تھی ۔

Loading...

اس دوران ملزم بچی کے پاس گیا اور اس کو دس روپے دئے اور کہا کہ نزدیک کی دکان سے کرکرے لے آئے ، جب بچی دکان جارہی تھی تو ملزم نے راستے میں ایک کھنڈر میں اس کی آبروریزی کی ۔

ملزم کی شناخت دیویندر سنگھ کے طور پر ہی ہوئی ، وہ شادی شدہ ہے ۔ فی الحال پولیس نے بچی کو میڈیکل کیلئے بھیج دیا ہے ۔ متعلقہ دفعات کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے ۔ ڈی ایس پی تیجندر ورما نے معاملہ کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ جانچ کی جارہی ہے ۔

Loading...