شرمناک ! 14 سال کی بیٹی کی باپ کرتا تھا آبروریزی اور دیگر دو بیٹیوں سے کرواتا تھا یہ کام

باپ کی حیوانیت کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ جہاں وہ اپنی ایک بیٹی کی آبروریزی کرتا تھا ، وہیں دیگر دو چھوٹی بیٹیوں سے بھیک منگوا کر اس سے اپنی عیاشی کا سامنا خریدتا تھا ۔

Nov 04, 2019 08:50 PM IST | Updated on: Nov 04, 2019 08:50 PM IST
شرمناک ! 14 سال کی بیٹی کی باپ کرتا تھا آبروریزی اور دیگر دو بیٹیوں سے کرواتا تھا یہ کام

علامتی تصویر

مدھیہ پردیش کے شیئو پور میں ایک باپ اپنی ہی نابالغ بیٹی کی ڈیرھ سال سے آبروریزی کررہا تھا ۔ وہ اپنی 14 سالہ بڑی بیٹی کا فحش ویڈیو بناکر اس کی آبروریزی کرتا تھا اور دیگر دو چھوٹی بیٹیوں سے بھیک منگوا کر اس سے اپنی عیاشی کیلئے سامان خریدتا تھا ۔ پریشان ہوکر بیٹی نے اتوار کو دیر رات چائلڈ ویلفیئر کمیٹی کو فون کرکے اس کی شکایت کی ۔

شیئو پور کی چائلد ویلفیئر کمیٹی کے پاس دیر رات ایک فون آیا ۔ یہ فون ایک بچی کا تھا ۔ وہ فون پر کہہ رہی تھی کہ اس کا باپ اس کی آبروریزی کررہا ہے ، اس کو بچالو ۔ فون آتے ہی کمیٹی کے اہلکار حرکت میں آگئے اور پولیس کو اس کی خبر دی ۔ پولیس اپنے ساتھ کمیٹی کے ارکین کو لے کر بچی کے بتائے ہوئے پتہ پر پہنچ گئی ۔

Loading...

رونگٹے کھڑا کردینے والا یہ واقعہ سٹی کوتوالی علاقہ کی دھان مل بستی میں پیش آیا ہے ۔ یہاں ایک باپ نے درندگی کی ساری حدیں پار کردی تھیں ۔ وہ بغیر ماں کی اپنی 14 سال کی بیٹی کی ایک عرصہ سے آبروریزی کررہا تھا ۔ بیٹی نے جو بیان دیا ہے ، اس کے مطابق باپ اس کو پہلے نشہ کی گولیاں کھلا دیتا تھا اور پھر اس کی فحش ویڈیو بناکر دھمکی دیتا تھا اور آبروریزی کرتا تھا ۔ ہوش میں آنے پر جب بیٹی مخالفت کرتی تھی تو باپ فحش ویڈیو دکھا کر اس کو بدنام کرنے کی دھمکی دیتا تھا ۔ ڈیڑھ سال سے باپ اپنی بیٹی کا جنسی استحصال کررہا تھا اور بیٹی خوف کی وجہ سے خاموش تھی ۔

باپ کی حیوانیت کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ جہاں وہ اپنی ایک بیٹی کی آبروریزی کرتا تھا ، وہیں دیگر دو چھوٹی بیٹیوں سے بھیک منگوا کر اس سے اپنی عیاشی کا سامنا خریدتا تھا ۔ اسی درمیان چائلڈ لائن نے دو چھوٹی بیٹیوں کو بھیک مانگتے ہوئے گرفتار کرلیا ۔ کمیٹی کے اراکین کاونسلنگ کیلئے گھر پہنچے اور انہوں نے بچیوں کو چائلڈ ویلفیئر کمیٹی کی صدر کا نمبر دیا ۔

کئی ماہ گزر جانے کے بعد بھی جب باپ کی درندگی کم نہیں ہوئی تو آبروریزی کی شکار بیٹی نے چائلڈ لائن میں فون کردیا اور ساری بات بتائی ، جس کے بعد کمیٹی حرکت میں آئی اور پولیس کے ساتھ گھر پہنچ کر تینوں بچیوں کو باپ کی درندگی سے بچالیا ۔ بچیوں کو اسٹاپ سینٹر میں بھیج دیا گیا ہے ۔

وہیں دوسری طرف پولیس نے ملزم باپ کو گرفتار کرلیا ہے ، لیکن اس کے خلاف آبروریزی کا معاملہ درج نہ کرکے صرف چھیڑ چھاڑ کا کیس درج کیا ہے ۔

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com