ویزہ کے نام پر پانچ مہینوں تک غیر ملکی خاتون کی آبروریزی ، فحش ویڈیو بھی بنائی ، دو پولیس اہلکاروں کے خلاف کیس درج

اترپردیش کے متھرا میں ایک مرتبہ پھر شرمسار کردینے والا واقعہ پیش آیا ہے ۔ خاکی پر بھروسہ کرنے والی ایک غیر ملکی خاتون کی دو پولیس اہلکاروں نے مہینوں تک آبروریزی کی ۔

Sep 08, 2019 03:46 PM IST | Updated on: Sep 08, 2019 03:46 PM IST
ویزہ کے نام پر پانچ مہینوں تک غیر ملکی خاتون کی آبروریزی ، فحش ویڈیو بھی بنائی ، دو پولیس اہلکاروں کے خلاف کیس درج

علامتی تصویر

اترپردیش کے متھرا میں ایک مرتبہ پھر شرمسار کردینے والا واقعہ پیش آیا ہے ۔ خاکی پر بھروسہ کرنے والی ایک غیر ملکی خاتون کی دو پولیس اہلکاروں نے مہینوں تک آبروریزی کی ۔ خاتون کی شکایت پر متھرا شہر کوتوالی پولیس نے ملزم دونوں پولیس اہلکاروں کے خلاف معاملہ درج کرلیا ہے اور خاتون کا میڈیکل کرواکر آگے کی کارروائی کی جارہی ہے ۔

متھرا شہر کوتوالی پہنچی کرغزستان کی رہنے والی خاتون نے شکایت کی ہے کہ گزشتہ پانچ ماہ سے وردی والے ہی مدد کے نام پر اس کی آبروریزی کررہے تھے ۔ متاثرہ کے مطابق وہ لکھنو جارہی تھی ، اسی دوران اس کی ملاقات آگرہ فورٹ پر تعینات سپاہی دھرمیندر گری سے ہوئی ۔ اس نے ویزہ بنوانے میں مدد کا یقین دلایا اور بہلا پھسلا کر اس کی آبروریزی کی ۔ ملزم دھرمیندر نے اس کی ویڈیو کلپ بھی بنالی ۔ بعد میں اس کلپ کی بنیاد پر اس نے کئی مرتبہ آبروریزی کی ۔ یہی نہیں بعد میں اپنے ساتھی آکاش پوار سے بھی اس کی عزت تار تار کروائی ۔ دونوں سپاہیوں کی اس ناپاک حرکت سے پریشان ہو کر متاثرہ نے پولیس میں شکایت درج کروائی ہے ۔

پولیس نے بھی معاملہ بیرون ملک سے وابستہ ہونے کی وجہ سے فورا آگرہ فورٹ پر تعینات سپاہی آکاش پوار اور دھرمیندر گری پر آئی پی سی کی دفعہ 376 ( دو ) این اور 506 میں کیس درج کرلیا ہے ۔ تحریر کے مطابق دونوں ملزم سپاہی آگرہ جی آر پی فورٹ پر تعینات ہیں اور ویڈیو وائرل کرانے کے نام پر غیر ملکی خاتون کی آبروریزی کررہے تھے ۔ پولیس اب خاتون کا میڈیکل جانچ کروا رہی ہے اور ساتھ ہی متعلقہ ہوٹل سنجے رائل کے سی سی ٹی وی فوٹیج کھنگال کر واردات سے متعلق ثبوتوں کو اکٹھا کرنے میں مصروف ہے ۔

Loading...

Loading...