درندگی کی انتہا، نابالغ سےاجتماعی آبروریزی کےبعد پرائیویٹ پارٹ میں ڈالا ڈنڈا اورتڑپتا چھوڑکربھاگ گئے

بلاس پورکے گوریلا پولیس سےملی تفصیلات کے مطابق تھانہ علاقہ کے ایک گاؤں میں 16 سالہ نابالغ کے ساتھ آبروریزی کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔

Dec 02, 2019 08:04 PM IST | Updated on: Dec 02, 2019 08:12 PM IST
درندگی کی انتہا، نابالغ سےاجتماعی آبروریزی کےبعد پرائیویٹ پارٹ میں ڈالا ڈنڈا اورتڑپتا چھوڑکربھاگ گئے

نابالغ سےاجتماعی آبروریزی کےبعد پرائیویٹ پارٹ میں ڈالا ڈنڈا اورتڑپتا چھوڑکربھاگ گئے

بلاسپور: چھتیس گڑھ  کے بلاس پورمیں دہلی کے نربھیا سانحہ جیسی حیوانیت والی واردات ہوئی ہے۔ بلاس پورکے پینڈرا کےگوریلا تھانہ علاقے میں ایک نابالغ سےآبروریزی کی گئی۔ اس کے بعد اس کے پرائیویٹ پارٹ میں ملزمین نے ڈنڈا ڈال دیا اورمتاثرہ لڑکی کو تڑپتا چھوڑ کربھاگ گئے۔ اس واردات کے بعد سےعلاقے میں زبردست اشتعال ہے۔ پولیس نے معاملے میں اب تک دوملزمین کوگرفتارکیا ہے۔ واردات گزشتہ یکم دسمبرکی دوپہرتقریباً ڈیڑھ بجے کی بتائی جارہی ہے۔ پولیس نےملزمین کودودسمبرکوعدالت میں پیش کیا۔

بلاس پور کے گوریلا پولیس سے ملی تفصیلات کے مطابق تھانہ علاقہ کے ایک گاؤں میں 16 سالہ نابالغ کے ساتھ آبروریزی کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ ملزمین نے واردات کواس وقت انجام دیا، جب نابالغ گھرسےکچھ دورکھیت میں گائے چرانےگئی تھی۔ اسی دوران ملزم 28 سالہ رائے سنگھ اور20 سالہ منوج واکرے پہنچےاورنابالغ کا اغوا کیا اورجنگل میں لے جا کرواردات کوانجام دیا۔

Loading...

بوا کو دیکھ کر بھاگے ملزم

پولیس کوملی شکایت کے مطابق متاثرہ واردات کے دوران مسلسل چیخ رہی تھی۔ جائے حادثہ سےکچھ دورپرہی اس کی بوا (پھوپھی) نےآوازسنی اوروہ جنگل کی طرف گئی تواسے آتے ہوئےدیکھ کرملزم بھاگ گئے۔ پھوپھی نےمتاثرہ کواٹھایا اورگوریلا تھانہ لےگئی، جہاں سے متاثرہ کواسپتال میں داخل کرایا۔ گوریلا تھانہ انچارج امت پاٹلے نے بتایا کہ متاثرہ لڑکی تھوڑا کم سنتی ہے، اس لئے گونگی اوربہری طالبات کو پڑھانے والے اساتذہ کوبلایا گیا ہے، جو اشاروں سے بات کرسکیں اوراسے سمجھا سکیں۔ خاتون پولیس اورکاؤنسلراس کا بیان لینے کی کوش کررہے ہیں۔ پرائیویٹ پارٹ میں ڈنڈا ڈالنے کی تصدیق نہیں ہوئی ہے، لیکن ایسی شکایت کی گئی ہے۔ اس زاویہ پرتحقیقات کی جارہی ہے۔ متاثرہ کے بیان کے بعد ہی اس پرصورتحال واضح ہوگی۔ ملزمین کوگرفتارکرلیا گیا ہے۔

نلیش ترپاٹھی کی رپورٹ

Loading...