رونگٹے کھڑے کر دینے والا واقعہ، حاملہ لڑکی کا قتل کرکے پیٹ سے نکالا بچہ

امریکہ کے شکاگوں میں ایک دل دہلانے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ پولیس نے تین لوگوں پر ایک حاملہ لڑکی کے قتل کا الزام لگایا گیا ہے بس اتنا ہی نہیں انہو ں نے موت کے بعد اس کے حمل سے بچہ بھی نکال لیا تھا۔

May 17, 2019 06:17 PM IST | Updated on: May 17, 2019 06:40 PM IST
رونگٹے کھڑے کر دینے والا واقعہ، حاملہ لڑکی کا قتل کرکے پیٹ سے نکالا بچہ

علامتی تصویر

امریکہ کے شکاگوں میں ایک دل دہلانے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ پولیس نے تین لوگوں پر ایک حاملہ لڑکی کے قتل کا الزام لگایا گیا ہے اور انہو ں نے موت کے بعد اس کے حمل سے بچہ بھی نکال لیا تھا۔ پولیس نے بتایا کہ 19 سالہ مارلینا اوچالو لوپیج کو 23 اپریل کو ایک شناسا کے گھر بلایا گیا کہ اسے بچے کے کام آنے والا سامان مفت میں دا جائے گا۔ وہاں پہنچنے پر اس کا گلا دباکر قتل کردیا گیا اور اس کے بچے کو حمل(پیٹ) سے نکال لیا گیا۔ 46 سالہ کلارسا فگ یورو اور اس کی بیٹی 24 ڈیسی ری پر فرسٹ ڈگری قتل کا الزام لگایا گیا ہے۔

فگ یورو کے عاشق 40 سالہ پی اوٹر بوباک پر پولیس نے قتل کی بات چھپانے کا الزام لگایا ہے۔ شکاگو پولیس سربراہ اے ڈی جانسن نے ایک پریس کانفرنس میں جرم کو  گھنونا بتایا۔ جانسن نے کہا   'میں سوچ بھی نہیں سکتا کہ اس وقت اہل خانہ پر کیا گزر رہی ہوگی۔ اس وقت ان کے گھر میں خوشیاں منائی جانی چاہئے تھیں لیکن اس کے بجائے وہ ماں اور جس کا وجود اس دنیا میں ہی نہیں آیا ان دونوں کے جانے سےسوگ منا رہے ہیں۔

Loading...

اوچالو لو پیج کو آخری مرتبہ جس وقت دیکھاگیا اس کے چار گھنٹے کے اندر فگیورو نے ایمرجنسی سروس کو فون کرتے ہوئے دعوی کیا کہ اس نے ایک بچے کو پیدا کیا ہے جو سانس نہیں لے رہا ہے۔ نوزائیدہ کو نازک حالت میں اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ پولیس نے بچے کی میڈیکل کنڈیشن کے بارے میں میں بتانے سے انکار کر دیا۔ پولیس نے بتایا کہ لاپتہ لوپیج کے معاملے کے اہم معڑ تب آیا جب انہیں فگیورو کے ساتھ 7 مئی کو فیس بک پر اس کی بات چیت کا معلوم چلا۔

پولیس نے مبینہ طور سے منگل کی رات کو فگیورو کے گھر کی تلاشی لینے کے دوران کوڑے کے ڈبے سے لوپیج کی لاش کو پایا جسےوہاں چھپاکر رکھا گیا تھا۔ ڈی این اے جانچ میں یہ ثابت ہو گیا کہ بچہ اوچو لوپیج کا ہے جس کے بعد پولیس نے تلاشی وارنٹ نکلوایا۔

Loading...