سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں نابالغ طالبہ کے ساتھ ٹیچر نے کی یہ وحشیانہ حرکت

ہماچل پردیش کے اونا کے ایک سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں نابالغ طالبہ کا ٹیچر نے ریپ کیا۔ اس معاملے میں اب پولیس نے اسکول کے پرنسپل کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔

Jun 27, 2019 01:35 PM IST | Updated on: Jun 27, 2019 01:36 PM IST
سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں نابالغ طالبہ کے ساتھ ٹیچر نے کی یہ وحشیانہ حرکت

علامتی تصویر

ہماچل پردیش کے اونا کے ایک سرکاری اسکول کے ٹوائلیٹ میں نابالغ طالبہ کا ٹیچر نے ریپ کیا۔ اس معاملے میں اب پولیس نے اسکول کے پرنسپل کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ الزام ہے کہ نابالغ نے اسکول کے پرنسپل کو معاملے کی جانکاری دی تھی لیکن انہوں نے پولیس کو اطلاع نہیں دی۔ اب پولیس نے پرنسپل کو معاملے میں الزام بنایا ہے۔ پولیس نے پرنسپل کے خلاف معاملہ درج کرکے گرفتار کر لیا ہے۔۔

معلومات کے مطابق اونا کے امب کا یہ معاملہ ہے۔ اسکول میں 12ویں کا طالبہ نے اسکول ٹیچر پر ریپ کا الزام لگایا تھا۔ پولیس کو دی شکایت میں کہا گیا ہے کہ آئی ٹی ٹیچر نے باتھ روم میں اس کا ریپ کیا۔ اس سلسلے میں اس نے اسکول انتظامیہ کو بھی بتایا تھا لیکن کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

طالبہ کا الزام ہے ملزم ٹیچر نے اسے دھمکی دی تھی کہ اگر وہ کسی کو بتائے گی تو جان سے مار دے گا۔ بعد میں طالبہ نے اس سلسلے اہل خانہ کو جانکاری دی اور گھر والوں کے ساتھ امب پولیس اسٹیشن پہنچے۔۔ خاتون پولیس تھانہ اونا کو اطلاع کی گئی۔ شکایت چھان بین کے بعد پولیس نے ٹیچرکے خلاف ریپ کا معاملہ درج کر لیا ہے۔ اہم ملزم ٹیچر فی الحال عدالتی حراست میں ہے۔ محکمہ نے ملزم کو معطل کردیا ہے۔۔

Loading...

Loading...