پنجاب میں اپنے ہی گھر سے 10 ہزار روپئے چوری کرکے ممبئی پہنچی 18 سالہ لڑکی، پھرنوجوان نےکردیا یہ کام

پولیس کے مطابق ملزم نے دوشیزہ کیلئے کھانے کا بندوبست کیا اورپھردونوں نے مل کرکھانا بھی کھایا۔ اس کے بعد ملزم نے اس کی قحبہ خانہ میں ہی عصمت دری کی اوراسے دھمکی دی کہ وہ عصمت دری کا کسی سے ذکرنہ کرے۔

Nov 18, 2019 10:33 AM IST | Updated on: Nov 18, 2019 10:33 AM IST
پنجاب میں اپنے ہی گھر سے 10 ہزار روپئے چوری کرکے ممبئی پہنچی 18 سالہ لڑکی، پھرنوجوان نےکردیا یہ کام

علامتی تصویر

پنجاب سے تعلق رکھنے والی 18سالہ دوشیزہ جواپنے گھرسے بھاگ کرممبئی پہنچی تھی اس کی ممبئی کے ریڈ لائٹ علاقہ کماٹی پورہ میں عصمت دری کی گئی بعد میں مقامی ناگپاڑہ پولیس اسٹیشن نے عصمت دری کے ملزم اخترریاض الدین قریشی کوکماٹی پورہ میں نصب شدہ خفیہ سی سی ٹی وی کے فوٹیج کی مدد سے گرفتارکرلیا۔ ناگپاڑہ پولیس اسٹیشن کی سینئر پولیس انسپکٹر شالنی شرما کے مطابق پنجاب سے تعلق رکھنے والی اٹھارہ سالہ تعلیم یافتہ دوشیزہ کا اپنے والدین سے کسی بات سے جھگڑا ہو گیا تھا جس کے سبب اس نے 17اکتوبر کو اپنے گھر سے 10 ہزارروپئے چوری کیا اورپھروہ امرتسر، سورت اورراجستھان کے بعد 9نومبرکوممبئی پہنچ گئی ۔

علامتی تصویر

Loading...

اطلاعات کےمطابق جب وہ ممبئی پہنچی تو ممبئی سینٹرل اسٹیشن پراس کی ملاقات ملزم اخترریاض الدین قریشی سے ہوئی جس نے اسے روتا ہوادیکھ کر اس سے اظہار ہمدردی کیا۔ اس دوران متاثرہ دوشیزہ نے ملزم کواس کے دل کی باتیں بتلائیں جس کے بعد ملزم اسے کماٹی پورہ لے کر پہنچا جہاں اس نے دوشیزہ کی ملاقات قحبہ خانہ میں واقع ایک گھر والی سے کروائی جس نے دوشیزہ کی ہمت بندھاتے ہوئے یہ کہا کہ کسی بھی طرح کا اس کو ٹینشن لینے کی ضرورت نہیں ہے اور وہ یہاں پوری طرح سے محفوظ ہے ۔

پولیس کے مطابق ملزم نے دوشیزہ کیلئے کھانے کا بندوبست کیا اورپھردونوں نے مل کرکھانا بھی کھایا۔ اس کے بعد ملزم نے اس کی قحبہ خانہ میں ہی عصمت دری کی اوراسے دھمکی دی کہ وہ عصمت دری کا کسی سے ذکرنہ کرے۔ سینئرپولیس انسپکٹرشالنی شرما نے مزید کہا کہ ملزم نے عصمت دری کے بعد راہ فراراختیار کرلی۔ تاہم کسی طرح سے متاثرہ دوشیزہ قحبہ خانہ سے نکل کرسڑک پرپہنچی جہاں اس کی ملاقات ایک خاتون پولیس کانسٹبل سے ہوئی جس کے روبرو اس نے تمام تفصیلات بیان کی۔ بعد میں دوشیزہ کو ناگپاڑہ پولیس اسٹیشن لایا گیا اور طبی معائنہ کے بعد عصمت دری کاکیس درج کیا گیا ۔

علامتی تصویر

پولیس کے مطابق چونکہ دوشیزہ ملزم سے واقف نہیں تھی اور اس کی عصمت دری سے چند گھنٹوں قبل ہی ملاقات ہوئی تھی لہذا وہ اس کے تعلق سے مزید تفصیلات نہیں دے پا رہی تھی جس کے سبب پولیس نے دوشیزہ کو خفیہ ٹی وی کیمرے کے فوٹیج دکھایا۔ جس کے دوران ملزم کی شناخت کی گئی۔ ملزم کی شناخت کے بعد علاقہ میں مخبروں کاجال پھیلایا گیا اوراس کے بعد ملزم کی گرفتاری عمل میں آئی۔گرفتاری کے بعد 45سالہ ملزم نے اعتراف جرم کیا اور عدالت میں اسے پیش کیا گیا جہاں پراسے 7 دنوں کی پولیس تحویل میں رکھنے کا حکم جاری کیا گیا۔

Loading...