سماج وادی پارٹی کے دفتر میں خاتون لیڈر سے مارپیٹ، ہنگامہ

لکھیم پور کھیری۔ لکھیم پور کھیری ضلع میں سماج وادی پارٹی دفترمیں جم کر ہنگامہ ہوا۔

May 26, 2016 01:27 PM IST | Updated on: May 26, 2016 01:27 PM IST
سماج وادی پارٹی  کے دفتر میں خاتون لیڈر سے مارپیٹ، ہنگامہ

لکھیم پور کھیری۔ لکھیم پور کھیری ضلع میں سماج وادی پارٹی دفترمیں جم کر ہنگامہ ہوا۔  ایس پی عاملہ کی میٹنگ میں خواتین میں ایک دوسرے کے بال پکڑ کر مار پیٹ ہوئی اور وہ بھی پارٹی کے سینئر نیتاؤں کے سامنے۔ سماج وادی پارٹی  کے دفتر میں روتی بلکتی ڈاکٹر بے نظیر عمر نے اپنے کو پیٹے جانے کا الزام لگا یا۔ بے نظیر کا کہنا ہے کہ ایک عورت پٹتی رہی اور لیڈر دیکھتے رہے یہ کون سا انسانیت کا تقاضہ ہے۔انہوں نےاس حادثے کے لیے ایم ایل اے جی پٹیل پر سازش کا الزام لگایا ہے۔

ہوا یوں کہ لکھیم پور کھیری ضلع میں سماج وادی پارٹی کی ضلع عاملہ کی میٹنگ تھی۔ ضلع پنچایت صدر سے لے کر تمام ممبران اسمبلی اور لیڈر  پارٹی آفس لوہیا  بھون  میں موجود تھے۔ اتنے میں وہاں بے نظیر بھی آ گئیں۔  ان کو اوپر ہال میں جانے سے روکا گیا تو زبردستی چلی گئیں۔ اجلاس میں بے نظیر کے پہنچتے ہی تلخی بڑھ گئی۔ کچھ ارکان نے اعتراض کیا تو ان سے اجلاس سے باہر جانے کو کہا گیا۔ اسی بات کو لے کر تکرار بڑھ گئی اور  تکرار مار پیٹ میں بدل گئی۔

بے نظیر کا الزام ہے کہ  پارٹی کی خواتین ضلع صدر دویا سنگھ، میلانی چیئرمین انیتا یادو، ترپتی اوستھی سمیت تمام خواتین ان پر ٹوٹ پڑیں اور ان کو مارا پیٹا۔  بے نظیر کا الزام یہ بھی ہے کہ سماج وادی پارٹی کے رکن اسمبلی ، ضلع صدر کے سامنے انہیں مارا پیٹا جاتا رہا لیکن کسی نے انہیں نہیں بچایا۔

sp

Loading...

پارٹی  کے دفتر  میں ہوئے اس  ہائی وولٹیج ڈرامے اور ہنگامے کے بعد سماج وادی پارٹی میں کھلبلی مچی ہے۔ کوئی چٹخارے لے کر واقعہ کو بتا رہا تو کوئی سنجیدگی سے بیان کر رہا ہے۔ادھر اس معاملے میں پارٹی کے ضلع صدر کا کہنا ہے کہ بے نظیر اب کانگریس میں شامل ہو چکی ہیں۔ اس لیے ان کی میٹنگ میں آمد پر اعتراض کیا گیا۔ مار پیٹ بے نظیر نے ہی کی۔

Loading...