ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سگے خالو نے 13 سال کی لڑکی کی آبروریزی کی ، چھ ماہ کی حاملہ ہوئی نابالغ ، کھلا راز تو اڑگئے سب کے ہوش

اترپردیش کے سہارنپور ضلع میں رشتوں کو شرمسار کرنے والی ایک خبر سامنے آئی ہے ۔ ایک سگے خالو نے نابالغ بچی کی آبروریزی کی ہے ۔

  • Share this:
سگے خالو نے 13 سال کی لڑکی کی آبروریزی کی ، چھ ماہ کی حاملہ ہوئی نابالغ ، کھلا راز تو اڑگئے سب کے ہوش
ملک میں ریپسٹ کا شکار ہونے والی متاثرہ کی عمر 6 سال ے لیکر 60 سال تک ہے۔ درج معاملوں میں سب سے زیادہ شکار 18 سے 30 سال کی عمر والی خواتین بنیں۔

اترپردیش کے سہارنپور ضلع میں رشتوں کو شرمسار کرنے والی ایک خبر سامنے آئی ہے ۔ ایک سگے خالو نے نابالغ بچی کی آبروریزی کی ہے ۔ نابالغ بچی حاملہ ہوگئی ہے ۔ جب اہل خانہ کو اس کے بارے میں پتہ چلا ، تو انہوں نے پولیس تھانہ میں جاکر ملزم کے خلاف شکایت درج کرائی ۔ پولیس ملزم کو گرفتار کرنے کیلئے چھاپہ ماری کررہی ہے ۔


اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ سہارنپور کے رام پور منی ہاران تھانہ حلقہ میں واقع ایک گاوں میں پیش آیا ہے ۔ 13 سال کی نابالغ بچی اپنے بھائی کا علاج کرانے کیلئے ملزم کے گھر آئی تھی اور اسی دوران ملزم نے نابالغ بچی کی آبروریزی کی ، جس کے بعد وہ حاملہ ہوگئی ۔ اس گھنونی واردات کا اس وقت راز فاش ہوا ، جب بچی چھ ماہ بعد اپنے گھر لوٹی اور گھر والوں کو اپنی آپ بیتی سنائی ۔ بتایا جارہا ہے کہ متاثرہ لڑکی چھ ماہ کی حاملہ ہے ۔


متاثرہ لڑکی کے اہل خانہ نے ایس ایس پی آفس پہنچ کر ملزم کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ ایس ایس پی دنیش کمار پی نے جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ تھانہ رام پور منی ہاران حلقہ میں ایک نابالغ بچی کی آبروریزی کر کے اس کو حاملہ بنانے کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ نابالغ بچی کے اہل خانہ کی تحریر کی بنیاد پر مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور ملزم کی گرفتاری کی کوشش کی جارہی ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ دو ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں اور ملزم کو جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا ۔

First published: Dec 08, 2019 10:43 AM IST