باپ اور بھائی الگ الگ وقت پر کرتے تھے آبروریزی ، ماں بھی دیتی تھی ساتھ ، آپ بیتی سن کر پولیس بھی رہ گئی حیران

گھر سے بھاگ کر بڑی بہن کے پاس پہنچی 15 سالہ نابالغ لڑکی نے بتایا کہ کزشتہ کئی دنوں سے اس کے والد اور بڑے بھائی الگ الگ وقت پر اس کی آبروریزی کر رہے تھے ۔

Sep 04, 2019 06:06 PM IST | Updated on: Sep 04, 2019 08:02 PM IST
باپ اور بھائی الگ الگ وقت پر کرتے تھے آبروریزی ، ماں بھی دیتی تھی ساتھ ، آپ بیتی سن کر پولیس بھی رہ گئی حیران

شرمناک ! باپ اور بھائی الگ الگ وقت پر کرتے تھے آبروریزی ، ماں بھی دیتی تھی ساتھ

اترپردیش کے بریلی میں آبروریزی کا ایک انتہائی شرمناک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ گھر سے بھاگ کر بڑی بہن کے پاس پہنچی 15 سالہ نابالغ لڑکی نے بتایا کہ کزشتہ کئی دنوں سے اس کے والد اور بڑے بھائی الگ الگ وقت پر اس کی آبروریزی کر رہے تھے ۔

متاثرہ کے مطابق اس نے اس بات کی جانکاری اپنی سوتیلی ماں کو بھی دی ، لیکن اس نے اس کی مخالفت نہیں کی ۔ متاثرہ کے آنولہ شہر پہنچنے کے بعد بہنوئی نے پولیس کو تحریر دے کر ملزم باپ ، بھائی اور سوتیلی ماں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ پولیس نے متاثرہ کا بیان درج کرلیا اور معاملہ کی جانچ کی جارہی ہے ۔

Loading...

وہیں ایک دیگر معاملہ میں بریلی میں 11 ویں جماعت میں پڑھنے والی طالبہ اپنے ٹیچر کی وجہ سے اسپتال میں بھرتی ہے ۔ طالبہ کا الزام ہے کہ اس کے کلاس ٹیچر سونو کی نیت خراب ہے اور وہ اس کے ساتھ فحش حرکتیں کرتا ہے ۔ اس کے علاوہ طالبہ پر ٹیوشن پڑھنے کیلئے بھی دباو بناتا ہے۔ طالبہ کے ٹیوشن پڑھنے سے انکار پر وہ اس کی جم کر پٹائی کرتا ہے ۔ ٹیچر نے طالبہ کی اتنی پٹائی کی کہ وہ بیہوش ہوگئی اور صدمے میں ہے ۔ طالبہ کو اس کے اہل خانہ نے ضلع اسپتال میں داخل کرایا ہے ۔

وہیں طالبہ کے اہل خانہ کی تحریر پر پولیس نے میرگنج تھانہ میں ٹیچر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ ٹیچر کی اس حرکت سے استاد اور شاگرد کا رشتہ ایک مرتبہ پھر داغدار ہوگیا ہے ۔

Loading...