نابالغ لڑکی کا اغوا کرکے نصف درجن لوگوں نے کی اجتماعی آبروریزی ، بیہوش ہوجانے پر کی یہ گھنونی حرکت

اترپردیش کے علی گڑھ میں معصوم بچی کے قتل کا معاملہ ابھی ٹھنڈا بھی نہیں ہوا تھا کہ اب کشی نگر میں نابالغ کی اجتماعی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔

Jun 09, 2019 09:28 PM IST | Updated on: Jun 09, 2019 09:29 PM IST
نابالغ لڑکی کا اغوا کرکے نصف درجن لوگوں نے کی اجتماعی آبروریزی ، بیہوش ہوجانے پر کی یہ گھنونی حرکت

علامتی تصویر

اترپردیش کے علی گڑھ میں معصوم بچی کے قتل کا معاملہ ابھی ٹھنڈا بھی نہیں ہوا تھا کہ اب کشی نگر میں نابالغ کی اجتماعی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ یہاں درندوں نے ایک نابالغ لڑکی کو اس کے گھر کے پاس سے زبردستی اغوا کرلیا اور نصف درجن لوگوں نے اس کی اجتماعی آبروریزی کی ۔

اجتماعی آبروریزی کے دوران نابالغ لڑکی کے بیہوش ہوجانے پر یہ درندے اس کو گھر کے بغل میں پھینک کر بھاگ نکلے ۔ متاثرہ کی ماں واقعہ کی شکایت درج کرانے جب پولیس تھانہ پہنچی تو تھانہ دار نے اس کی بات سننے کی بجائے اس کو لوٹا دیا ۔ جب معاملہ میڈیا میں آیا تو پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے چھ ملزمین کو گرفتار کیا ہے ۔

Loading...

بتایا جارہا ہے کہ اہیرولی تھانہ حلقہ کے ایک گاوں میں نالی کو لے کر دو فریقوں میں تنازع تھا ۔ نالی بنانے کو لے کر دو دن پہلے دونوں فریقوں میں تنازع ہوا تھا ۔ اس دوران ایک فریق نے دوسرے فریق پر الزام لگایا کہ اس کی نابالغ لڑکی کو دوسرے فریقوں کے چھ لوگ زبردست اٹھاکر لے گئے اور اس کی آبروریزی کی ۔

نابالغ لڑکی کے جسم پر کئی جگہ زخم کے نشان تھے ۔ اس کی حالت نازک دیکھ کر اس کو پپرائچ سی ایچ سی میں بھرتی کرایا گیا ۔ اس کے بعد اہل خانہ تحریر لے کر تھانہ پہنچے ، لیکن اہیرولی بازار تھانہ کی پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی ۔ پولیس دو دنوں تک متاثرہ کے اہل خانہ کو بیرنگ لوٹاتی رہی ۔ تاہم اب کارروائی کرتے ہوئے چھ ملزمین کو گرفتار کیا ہے۔

 

Loading...